مغربی ممالک اوربین الاقوامی جوہری ادارہ  ہمارے مقروض ہیں / ہم نے جوہری حقوق حاصل کرلئے

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے قومی جوہری دن کی مناسبت سے مغربی ممالک اور بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ تم ہمارے مقروض اور احسانمند ہو، تم کو ہمارا قرضہ واپس کرنا چاہیے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے قومی جوہری دن کی مناسبت سے مغربی ممالک اور بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ تم ہمارے مقروض اور احسانمند ہو، آپ کو ہمارا قرضہ واپس کرنا چاہیے۔

صدر روحانی نے ایران کے پرامن جوہری پروگرام کی پیشرفت کے بارے میں رپورٹ سننے کے بعد کہا کہ ایران جوہری تحقیقات کے سلسلے میں آگے کی سمت گامزن ہے۔ صدر روحانی نے نطنز کے جوہری پلانٹ میں آئی آر 6 ایس، آئی آر 6، اور آئی آر 9 سنٹریفیوجزمیں گیس پہنچانے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم سنٹریفیوجز کی مشینوں میں سے آئی آر 6 سے اس وقت استفادہ کرسکتے ہیں۔

انھوں نے آئی آر 9  سنٹریفیوجزمشینوں کے بارے میں تحقیقات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ان مشینوں پر تحقیق کا عمل جاری ہے آئی آر 9  سنٹریفیوجزمشینوں میں 50 سو یورینیم افزودہ کرنے کی صلاحیت موجود ہے یعنی یہ مشینیں پہلی مشینوں کی نسبت 50 برابر افزودگی انجام دے سکتی ہیں۔

صدر حسن روحانی نے کہا کہ مغربی ممالک نے چونکہ ایٹمی صنعت سے غلط استفادہ کیا اس لئے وہ سمجھتے ہیں کہ ایران بھی ایسا ہی کرےگا۔ انھوں نے کہا کہ ایٹمی صنعت سے زراعت، صحت، صنعت، بجلی اور دیگر شعبوں میں استفادہ کیا جاسکتا ہے۔ ایران کے جوہری پروگرام کے بارے میں مغربی ممالک کی تشویش  غلط اور بے جا تھی اور بے جا ہے ۔ مغربی ممالک نے اپنی غلط سوچ کی بنا پر ایرانی عوام کو 15 سال سے دباؤ میں رکھا ہوا ہے جبکہ پرامن ایٹمی ٹیکنالوجی کا جصول ایرانی عوام کا حق ہے اور ہم نے ایرانی عوام کے حقوق کے حصول کے لئے مغربی ممالک کے غلط اور بے جا دباؤ کو برداشت کیا ، ہم نے استقامت اور پائداری کا مظاہرہ کیا اور اپنے ایٹمی حقوق پر آنچ نہیں آنے دی اور اس کے بعد بھی ہم ایرانی عوام کے حقوق کے بارے میں کسی قسم کا کوئي دباؤ قبول نہیں کریں گے۔

صدر حسن روحانی نے ایٹمی ٹیکنالوجی سے غلط استفادہ کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ نے ہیروشیما اور ناگاساکی میں ایٹمی بموں سے استفادہ کرکے سنگین جرائم کا ارتکاب کیا اور آج بھی امریکہ ایٹمی ٹیکنالوجی سے غلط استفادہ کررہا ہے۔

صدر روحانی نے مغربی ممالک اور بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آج تم ہمارے مقروض ہو ، ہم تمہارے مقروض نہیں، آج ہم بوشہر کے ایٹمی بجلی پلانٹ کو خود چلا رہے ہیں ، تم نے ہماری مدد کرنے کے بجائے ہمارے لئے مشکلات کھڑی کیں۔ آج ہم اپنے پاؤں پر کھڑے ہیں اور ہمارے سائنسداں علم و صنعت کے شعبوں میں ترقی اور پیشرفت کی سمت گامزن رہیں گے۔

News Code 1906032

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 5 =