فرانسیسی صدر نے کورونا وائرس کے لحاظ سے اپریل کو مشکل مہینہ قراردیدیا

فرانسیسی صدر ایمانوئیل میکروں نے کہا ہے کہ فرانس میں کورونا وائرس سے اموات کی مجموعی تعداد بہت جلد 1 لاکھ تک پہنچ جائے گی اور اس سلسلے میں اپریل کا مشکل مہینہ ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ فرانسیسی صدر ایمانوئیل میکروں نے کہا ہے کہ فرانس میں کورونا وائرس سے اموات کی مجموعی تعداد بہت جلد 1 لاکھ تک پہنچ جائے گی اور اس سلسلے میں اپریل کا مشکل مہینہ ہے۔ قوم سے خطاب میں صدر میکروں نے کورونا وائرس کے پیشِ نظر ماہ اپریل کو بہت ہی مشکل قرار دیدیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کورونا پابندیوں پر عمل کر کے ہم اس وبا پر قابو پاسکتے ہیں، اپریل کا مہینہ ہم سب کے لیے بہت سخت ہوسکتا ہے۔

فرانسیسی صدر نے مزید کہا کہ کورونا اموات کی مجموعی تعداد بہت جلد 1 لاکھ تک جاسکتی ہے، آئی سی یو میں موجود 44 فیصد کورونا وائرس کے مریض 65 سال سے کم عمر ہیں۔

اُن کا کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن کی پابندیاں پورے ملک میں نافذ کی جارہی ہیں، کورونا کی نئی پابندیوں کا اطلاق ہفتے سے ایک ماہ کے لیے ہوگا۔

ایمانوئیل میکروں نے یہ بھی کہا کہ رات کا کرفیو نافذ رہے گا، اندرون ملک سفر پر مزید پابندیاں ہوں گی۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ اسکول عارضی طور پر تین ہفتوں کے لیے بند کیے جارہے ہیں، مئی کے وسط سے ملک میں عائد کورونا پابندیاں بتدریج ختم کرنے کے قابل ہوں گے۔

News Code 1905903

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 7 =