یمن کے صوبہ تعز میں ایک شخص نے مؤذن کو قتل کردیا

یمن کے صوبہ تعز میں ایک شخص نے اذان کی اونچی آواز پر 80 سالہ مؤذن کو تیز دھار چھری کے وار کرکے قتل کردیا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے غیر ملکی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ یمن کے صوبہ تعز میں ایک شخص نے اذان کی اونچی آواز پر 80 سالہ مؤذن کو تیز دھار چھری کے وار کرکے قتل کردیا۔ اطلاعات کے مطابق یمن کے مغربی صوبے تعز میں 30 سالہ شخص نے فجر کی نماز کے لیے اذان دینے مسجد جانے والے مؤذن شیخ محب شمسان پر تیز دھار چھری سے حملہ کردیا۔

مذکورہ شخص نے مؤذن کے سر پر بڑا پتھر مار کر اسے ہمیشہ ہمیشہ کے لیے موت کی نیند سلادیا جب کہ قاتل نے گرفتاری دینے کے بجائے مزاحمت دکھائی تو پولیس نے پاؤں پر گولی مارکر ملزم کو قابو کرلیا۔

قاتل کو طبی امداد کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے جس کے بعد مزید تفتیش کا آغاز کیا جائے گا۔ ابتدائی بیان میں ملزم کا کہنا تھا کہ وہ فجر کی اذان کی اونچی آواز سے تنگ تھا جو نیند میں خلل کا باعث تھی۔ مقتول مؤذن شیخ محب شمسان اسی مسجد میں امام مسجد کے فرائض بھی انجام دیتے تھے۔

News Code 1905800

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 7 =