طالبان نے افغان صدر کی قبل از وقت صدارتی الیکش کرانے کی تجویز رد کردی

طالبان دہشت گردوں نے افغانستان کے صدر اشرف غنی کی ملک میں اس سال کے آخر تک صدارتی الیکشن کرانے کی پیشکش مسترد کردی۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ طالبان دہشت گردوں  نے افغانستان کے صدر اشرف غنی کی ملک میں اس سال کے آخر تک صدارتی الیکشن کرانے کی پیشکش مسترد کردی۔ اطلاعات کے مطابق افغانستان کے صدر اشرف غنی نے امریکہ کی جانب سے تمام فریقین پر مشتمل عبوری حکومت کے قیام کی تجویز سے اتفاق نہ کرتے ہوئے ملک میں دوبارہ صدارتی الیکشن کرانے کی پیشکش کی تھی تاہم طالبان نے صدر اشرف غنی کی پیشکش کو مسترد کردیا ہے۔

طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ صدر اشرف غنی ایک ایسے عمل کے بارے میں بات کر رہے ہیں، جو ہمیشہ ہی تنازعات کا باعث بنا ہے۔

ترجمان طالبان ذبیح اللہ مجاہد نے مزید کہا کہ ہم صدارتی الیکشن کی کسی صورت حمایت نہیں کریں گے۔ افغانستان میں پائیدار امن اور خوشحال مستقبل کے بارے میں کوئی بھی فیصلہ فریقین کے مابین جاری مذاکرات کے ذریعہ ہم آہنگ بنانا لازمی ہے۔

افغانستان میں امن معاہدے پر عمل درآمد میں تاخیر کے باعث فریقین کے درمیان پیدا ہونے والی نااتفاقی کے باعث نئی تجاویز سامنے آرہی ہیں۔ امریکہ  افغانستان سے اپنے فوجی انخلا کے وعدے سے بھی پیچھے ہٹ گیا ہے۔ طالبان کی تشکیل میں بھی سعودی عرب، امریکہ اور پاکستان نے اہم کردار ادا کیا تھا۔

News Code 1905798

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 11 =