ایرانی وزیر خارجہ کی دنیائے اسلام میں انتہا پسندی کے خاتمہ پر تاکید

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے اسلامی تعاون تنظیم کے اجلاس سے آن ائن خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ دنیائے اسلام سے تکفیری نظریات اور انتہا پسندی کا خاتمہ بہت ضروری ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق  اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے اسلامی تعاون تنظیم کے اجلاس سے آن ائن خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ دنیائے اسلام سے تکفیری نظریات اور انتہا پسندی کا خاتمہ بہت ضروری ہے۔

اطلاعات کے مطابق اسلامی تعاون تنظیم کا آن لائن اجلاس نیویارک میں منعقد ہوا جس میں مغربی ممالک میں اسلامو فوبیا کا مقابلہ کرنے کے بارے میں تبادلہ خیال کیا گیا۔

ایرانی وزیر خارجہ نے اپنے خطاب میں اسلامی تعاون تنظیم کے اہداف کو بہت ہی اہم اور مؤثر قراردیتے ہوئے کہا کہ

اسلامی تعاون تنظیم کے اہداف میں پرامن بقائے باہمی کو فروغ دینا ، مذاہب اور ثقافتوں کے مابین گفتگو اور مکالمہ کی حوصلہ افزائی کرنا نیز نسل پرستی ، زینوفوبیا ، اسلامو فوبیا ، انتہا پسندی اور مذہبی منافرت کی تمام اقسام کا مقابلہ کرنا شامل ہے۔ ظریف نے کہا کہ دنیا کے مختلف حصوں میں اسلام اور مسلمانوں کے خلاف عدم رواداری اور عدم برداشت کا سلسلہ جاری ہے جبکہ اسلام اور مسلمانوں کا تکفیری  اور دہشت گردانہ سوچ سے کوئی تعلق نہیں ہے اسلام ہمیں امن اور رواداری اور برداشت کا درس دیتا ہے۔

News Code 1905701

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 2 =