مشترکہ ایٹمی معاہدے پر عمل کی ضرورت ہے دوبارہ مذاکرات کی ضرورت نہیں

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے فرانس کے صدر میکرون سے ٹیلیفون پر گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ مشترکہ ایٹمی معاہدے پر عمل کی ضرورت ہے دوبارہ مذاکرات کی ضرورت نہیں ۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے فرانس کے صدر میکرون سے ٹیلیفون پر گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ مشترکہ ایٹمی معاہدے پر عمل کی ضرورت ہے دوبارہ مذاکرات کی ضرورت نہیں ۔

صدر حسن روحانی نے کہا کہ مشترکہ ایٹمی معاہدے پر ایران نے اپنے وعدوں میں کمی کا فیصلہ اس وقت کیا جب امریکہ مشترکہ ایٹمی معاہدے سے خارج ہوگیا اور تین یورپی ممالک نے بھی اپنے وعدوں پر عمل نہیں کیا۔

صدر روحانی نے کہا کہ تہران کا بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کے ساتھ تعوان جاری رہےگا۔ ایرانی صدر نے کورونا کی عالمی وباء کا مقابلہ کرنے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وائرس کا مقابلہ کرنے کے لئے تمام ممالک کے درمیان باہمی تعاون کی ضرورت ہے جبکہ امریکہ کی ظالمانہ اور غیر قانونی پابندیوں کی وجہ سے ایران کو کورونا وائرس کا مقابلہ کرنے کے سلسلے میں کافی مشکلات کا سامنا رہا ہے۔

صدر روحانی نے کہا کہ بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کے بورڈ میں ایران کے خلاف کوئی بھی اقدام حل شدہ مسئلہ کو پیچيدہ بنا دےگا۔ ایران اور فرانس کے تعلقات دیرینہ اور تاریخی ہیں اور فرانس علاقائی اور عالمی سطح پر اپنا اہم کردار ادا کرسکتا ہے اور امریکہ کے ظآلمانہ اقدامات کے مقابلے میں یورپی ممالک کو خاموش نہیں رہنا چاہیے۔ فرانس کے صدر میکرون نے بھی باہمی گفتگو میں مشترکہ ایٹمی معاہدے کو اہم قرارددیا اور اس کی حفاظت پر زوردیتے ہوئے کہا کہ فرانس اس سلسلے میں اپنا فعال کردار ادا کرےگا ۔

News Code 1905497

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 2 =