افغانستان میں مقتول صحافی کے گھر پر حملے میں 3 افراد ہلاک

افغانستان میں گزشتہ ماہ قتل ہونے والے نوجوان صحافی کے گھر پر مسلح دہشت گردوں نے حملہ کر کے 3 افراد کو ہلاک کردیا اور 3 کو اغوا کر کے لے گئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے خامہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغانستان میں گزشتہ ماہ قتل ہونے والے نوجوان صحافی کے گھر پر مسلح دہشت گردوں  نے حملہ کر کے 3 افراد کو ہلاک کردیا اور 3 کو اغوا کر کے لے گئے ہیں۔ افغان میڈیا کے مطابق مغربی صوبے غور ميں یکم جنوری کو نجی ریڈیو اسٹیشن کے ایڈیٹر انچیف بسم اللہ عادل ایماق کو قتل کیا گیا تھا جب کہ اب مقتول صحافی کے گھر پر حملہ کیا گیا ہے۔ حملہ آوروں نے گھر پر اندھا دھند فائرنگ کردی۔

فائرنگ سے مقتول صحافی کے بھائی اور بھتیجے سمیت 3 افراد ہلاک ہوگئے جب کہ حملہ آور اہل خانہ میں سے دیگر 3 افراد کو اغوا کرکے اپنے ہمراہ لے گئے جن کا تاحال کچھ پتہ نہیں چل سکا ہے۔ حملے میں 4 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔

افغانستان میں انسانی حقوق کے ليے کام کرنے والی تنظيم نے حملے کی ذمہ داری طالبان پر عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ صحافی کے قتل اور گھر پر حملے میں طالبان دہشت گرد ملوث ہے۔

مقتول صحافی کے زندہ بچ جانے والے بھائی نے بھی حملے کی ذمہ داری طالبان پر عائد کی ہے ۔

News Code 1905471

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 2 =