امریکی فوج میں سفید فام فوجیوں کی بالادستی اور نسل پرستی برقرار

امریکی وزارت دفاع پینٹاگون نے پریشان کن تفصیلی رپورٹ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی فوج میں سفید فام فوجیوں کی بالادستی اور نسل پرستی برقرار اور فعال ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایسوسی ایٹڈ پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکی وزارت دفاع پینٹاگون نے پریشان کن تفصیلی رپورٹ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی فوج میں سفید فام بالادستی فعال اور سرگرم ہے۔ امریکی وزارت دفاع کی رپورٹ میں سفید فام بالادستی کی سوچ کے حامل اہلکاروں کی شناخت کرنے کیلئے تجاویز بھی پیش کی گئی ہیں۔

امریکی میڈیا کے مطابق کیپٹل ہل پر ہونے والے حملے کے سلسلے میں امریکی فوج کے 27 موجودہ اور سابق اہلکاروں کو فیڈرل چارجز کا سامنا ہے۔

انتہا پسندی پر تیار کی گئی پینٹاگون کی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ کس طرح امریکی فوج میں سفید فام بالادستی فعال ہے۔

رپورٹ میں فوجی اہلکاروں میں سفید فام بالادستی کی شناخت سے متعلق تجاویز بھی پیش کی گئی ہیں تاکہ ایسے اہلکاروں کو کام کرنے سے روکا جاسکے۔

رپورٹ میں ایک سابق نیشنل گارڈز اہلکار  کی مثال دی گئی ہے جو خطرناک انتہا پسند گروپ کا رکن رہ چکا ہے اور دوران سروس اپنے انتہا پسندانہ  نظریات کا کھلے عام اظہار کرتا رہا ہے۔

سفید فام بالا دستی کی سوچ کے حامل کچھ اہلکاروں کی شناخت ان کے فاشسٹ ٹیٹوز اور ٹی شرٹس لوگوز کی بنیاد پر کی گئی ہے۔

News Code 1905428

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 6 =