ایران نے بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کے ساتھ اضافی پروٹوکول آج سے متوقف کردیا

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کے ساتھ این پی ٹی کے دائر میں تعاون جاری رکھنے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایرانی حکومت نے ایرانی پارلیمنٹ کی قرارداد کے مطابق بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کے ساتھ اضآفی پروٹوکول کوآج سے متوقف کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کے ساتھ این پی ٹی کے دائر میں تعاون جاری رکھنے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایرانی حکومت نے  ایرانی پارلیمنٹ کی قرارداد کے مطابق بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کے ساتھ اضآفی پروٹوکول کوآج سے متوقف کردیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ ہم نے ایٹمی ایجنسی کو اس موضوع کے بارے میں 15 فروری کو آگاہ کردیا تھا۔ جواد ظریف نے کہا کہ بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کے ساتھ اضافی پروٹوکول ایرانی پارلیمنٹ کے قوانین کی روشنی میں آج صبح سے متوقف کردیا گیا ہے۔ ایرانی وزیر خارجہ نے بین الاقوامی ایٹمی ایجنسی کے سربراہ کے دورہ ایران کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ عالمی جوہری ادارے کے سربراہ ریفائل گروسی کے ساتھ بھی ایرانی پارلیمنٹ کے قانون کو نافذ کرنے کے سلسلے میں بات چیت ہوئی جس کے مطابق یہ طے پایا کہ ایرانی ایٹمی پروگرام کی جو ویڈیو ضبط ہورہی ہیں انھیں ایٹمی ایجنسی کو نہیں دیا جائےگا البتہ ایٹمی ایجنسی  کے ساتھ این پی ٹی کے دائرے میں تعاون جاری رہےگا۔

News Code 1905393

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 4 =