عراق میں داعش کے ہاتھوں قتل ہونے والے 104 افراد کو شناخت کےبعددفن کردیاگیا

عراق میں اجتماعی قبر سے ملنے والی اقلیتی برادری " ایزدی " کے 2014 میں داعش کے ہاتھوں قتل ہونے والے 104 افراد کی لاشوں کو شناخت کے بعد دفن کردیا گیا ہے۔

مہرخبررساں ایجنسی نے سومریہ کے حوالےسےنقل کیا ہے کہ عراق میں اجتماعی قبر سے ملنے والی اقلیتی برادری " ایزدی " کے 2014 میں داعش کے ہاتھوں قتل ہونے والے 104 افراد کی لاشوں کو شناخت کے بعد دفن کردیا گیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق عراق میں ایزدی کمیونیٹی کے 104 افراد کی لاشوں کو فرانزک لیب سے شناخت کے بعد لواحقین کے حوالے کردیا گیا جنہوں نے شمالی علاقے کے گاؤں کوچو میں سپرد خاک کردیا۔

ایزدی برادری کی مقامی تنظیم کے سربراہ  خیر علی ابراہیم نے میڈیا کو بتایا کہ یہ 104 وہ تمام افراد تھے جنہیں اگست 2014 میں وہابی دہشت گرد تنظیم داعش نے حملہ کرکے ہلاک کردیا تھا۔

ایزدی عراق سے داعش کے خاتمے کے بعد سے دوبارہ اپنے گھروں کو لوٹ رہے ہیں، 104 تابوتوں کو ایک جلوس کے ساتھ گاؤں لایا گیا اور ہر تابوت پر مرنے والے کی تصویر بھی موجود تھی۔

تابوتوں کو قبرستان لایا گیا اور اپنے عقائد کے تحت آخری رسومات ادا کی گئیں۔ اس موقع پر لواحقین اور بڑی تعداد میں مقامی ایزدی بھی موجود تھے۔

News Code 1905169

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 2 =