شہید سلیمانی درحقیقت غیرت، شجاعت اور دینداری کا مظہر تھے

سازمان تبلیغات اسلامی کے سربراہ نے " ہنر اور ارتباطات کے آئينہ میں ہیرو " بین الاقوامی سمینار کے نام اپنے پغام میں کہا ہے کہ شہید سلیمانی درحقیقت غیرت، شجاعت اور دینداری کا مظہر تھے۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق  سازمان تبلیغات اسلامی کے سربراہ حجۃ الاسلام والمسلمین محمد قمی نے " ہنر اور ارتباطات کے آئينہ میں ہیرو " نامی بین الاقوامی سمینار کے نام اپنے پیغام میں کہا ہے کہ شہید سلیمانی درحقیقت غیرت، شجاعت اور دینداری کا مظہر تھے۔  انھوں نے کہا کہ امید کی جاتی ہے کہ مذکورہ سمینار کے ذریعہ شہید قاسم سلیمانی کی زندگی جدید ترین مخفی پہلوؤں کو ظاہر کیا جائےگا۔

حجۃ الاسلام قمی نے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ شہید قاسم سلیمانی اور شہید ابو مہدی مہندس کی خدمات ، اخلاص اور کارناموں کو کتاب ، تحریر ،تصویر اور رنگ میں بیان کرنا ممکن نہیں ہے ، انھوں نے اپنی خدمات، ایثار، اور قربانی کی بے مثال نمنونے عملی طور پر پیش کئے اور وہ شہادت کے متمنی تھے انھوں نے راہ خدا میں اسلام اور مسلمانوں کی سربلندی کے لئے بیشمار زحمتیں اور مشکلات برداشت کیں اور انھوں نے مسلمانوں اور غیر مسلمانوں کو داعش دہشت گرد تنظیم کے خونی پنجوں سے نجات دلانے میں اہم کردار ادا کیا، داعش دہشت گرد تنظيم کو امریکہ ، اسرائیل اور ان کے اتحادی عربوں کی بھر پور حمایت حاصل تھی۔ شہید سلیمانی نے عراق اور شام میں داعش کو شکست دیکر درحقیقت  ثابت کردیا کہ امریکہ کو شکست سے دوچار کیا جاسکتا ہے اگر مسلمان متحدہ ہوجائیں تو فلسطینی مسلمانوں کو اسرائیل کے خونی پنجوں سے چھڑیا جاسکتا ہے اور بیت المقدس کو آزاد کرایا جاسکتا ہے، شہید سلیمانی  غیرت، شجاعت اور دینداری کی علامت تھے اور انھوں نے عملی میدان میں ثابت کردیا کہ وہ مرد میدان اور مرد الہی ہیں ۔

News Code 1904700

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 10 =