بھارتی حکومت نے مقبوضہ کشمیر کے سابق وزیر اعلی کے اثاثے ضبط کرلئے

مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارتی تحقیقاتی ادارے انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے منی لانڈرنگ کی تحقیقات کے سلسلے میں سابق وزیر اعلی اور نیشنل کانفرنس کے صدر فاروق عبداللہ کے 11 کروڑ86لاکھ روپے مالیت کے اثاثے ضبط کرلئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے کشمیرمیڈیاسروس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارتی تحقیقاتی ادارے انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے منی لانڈرنگ کی تحقیقات کے سلسلے میں سابق وزیر اعلی اور نیشنل کانفرنس کے صدر فاروق عبداللہ کے 11 کروڑ86لاکھ روپے مالیت کے اثاثے ضبط کرلئے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق تحقیقاتی ادارہ منی لانڈرنگ کے معاملے کی تحقیقات کررہا ہے جو جموں و کشمیر کرکٹ ایسوسی ایشن میں مالی بے ضابطگیوں سے متعلق ہے۔ ادارے نے کچھ دیگر افراد پر بھی اسی طرح کے الزامات عائد کیے ہیں۔تحقیقاتی ادارے نے منی لانڈرنگ کی روک تھام کے قانون کے تحت ضبطی کا عارضی آرڈر جاری کیا ہے اور مذکورہ جائیداد جموں اور سرینگر میں واقع ہے۔ادھرنیشنل کانفرنس نے سابق وزیر اعلی فاروق عبد اللہ کی جائیداد کی ضبطی کوسیاسی انتقام قراردیا جس کا مقصد سیاسی مسائل طے کرنا ہے۔

News Code 1904478

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 7 =