پاکستانی حکومت کا سینیٹ انتخابات فروری میں کرانے کا فیصلہ

پاکستانی حکومت نے سینیٹ انتخابات مارچ کے بجائے فروری اور شو آف ہینڈ کے ذریعہ کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکسپریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستانی حکومت نے سینیٹ انتخابات مارچ کے بجائے فروری اور شو آف ہینڈ کے ذریعہ کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں سینیٹ الیکشن جلد کرانے سے متعلق مشاورت کی گئی، ذرائع کے مطابق کابینہ اجلاس میں حکومت کی جانب سے سینیٹ انتخابات مارچ کے بجائے فروری میں شو آف ہینڈ کے ذریعے کرانے کا فیصلہ کیا گیا جب کہ اس حوالے سے سپریم کورٹ سے رہنمائی لی جائے گی۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو میں وفاقی وزیراطلاعات شبلی فراز کا کہنا تھا کہ وزیراعظم چاہتے ہیں کہ سینیٹ الیکشن انتہائی صاف شفاف ہوں، سب جانتے ہیں کہ سینیٹ الیکشن میں ہارس ٹریڈنگ کے الزامات لگتے ہیں جب کہ وزیراعظم نے اسی معاملے پر 20 ارکان صوبائی اسمبلیوں کو اپنی ہی پارٹی سے نکال دیا تھا۔

شبلی فراز نے کہا کہ سپریم کورٹ کی ہدایات کی روشنی میں ہم نے ایک بل اسمبلی میں پیش کیا ہے اور آج اجلاس میں اس پر بحث ہوئی کہ ہم اس بل کو کس طرح پاس کراسکتے ہیں، اس بل کو پاس کرانے کے لیے کوئی آئینی ترمیم، ایگزیکٹیو آرڈر یا الیکشن کمیشن کے ذریعے پاس کروایا جائے تاہم ہم نے طے کیا کہ اس معاملے پر سپریم کورٹ سے رہنمائی لی جائے گی۔

News Code 1904388

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 5 =