نائیجریا  میں اسکول پر حملے کے بعد 400 سے زائد طالب علم لاپتہ

نائیجریا میں اسکول پر حملے کے بعد 400 سے زائد طالب علم لاپتہ ہوگئے ہیں جن کے اغوا ہونے کا خدشہ ہے۔

مہر خـبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ نائیجریا  میں اسکول پر حملے کے بعد 400 سے زائد طالب علم لاپتہ ہوگئے ہیں جن کے اغوا ہونے کا خدشہ ہے۔

اطلاعات کے مطابق نائجیریا کے شمال مغربی صوبے کتسینا میں واقع اسکول پر وہابی دہشت گردوں  نے  حملہ کردیا۔ حملہ آوردہشت گردوں کے پاس خود کار اسلحہ تھا۔

مقامی پولیس سربراہ کے مطابق حملہ آوروں اور پولیس کے مابین فائرنگ میں بعض طلبہ کو اسکول سے فرار ہونے کا موقعہ مل گیا۔ اسکول میں طلبا کی مجموعی تعداد 600 بتائی جاتی ہے جن میں سے صرف 200 کے بارے میں معلومات حاصل ہوسکی ہے۔

حکومتی ترجمان کا کہنا ہے کہ پولیس، فوج اور نائجیرین فضائیہ اسکول حکام کے ساتھ رابطے میں ہے اور لاپتہ یا اغوا ہونے والے طالب علموں کے بارے میں معلومات جمع کی جارہی ہے۔

خبر رساں اداروں سے بات کرتے ہوئے بعض مقامی افراد کا کہنا ہے کہ انہوں نے حملہ آوروں کو اپنے ساتھ کچھ بچوں کے لے جاتے ہوئے دیکھا ہے۔

نائیجیریا میں اس سے قبل اپریل 2014 میں ایسا ہی ایک ہولناک واقع پیش آیا تھا جب  وہابی دہشت گرد گروپ بوکو حرام نے چیبوک میں بچیوں کے ایک اسکول پر حملہ کرکے 246 طالبات کو اغوا کرلیا تھا۔ ان میں سے 100 بچیاں آج تک لاپتہ ہیں۔ عرب ذرائع کے مطابق سعودی عرب سے منسلک وہابی دہشت گرد دنیا بھر میں دہشت گردانہ کارروائیوں میں ملوث ہیں۔

News Code 1904358

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 2 =