بھارت میں کسانوں نے کل 8 دسبر کو ملک گیر ہڑتال کا اعلان کردیا

بھارت میں کسانوں کا احتجاج مسلسل جاری ہے، بھارتی حکومت کی طرف سے تین نئے زرعی قوانین کی منسوخی کا مطالبہ نہ مانے جانے پر کسانوں نے کل 8 دسمبر کو ملک گیر ہڑتال اور احتجاج مزید تیز کرنے کی دھمکی دیدی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے بھارتی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارت میں کسانوں کا احتجاج مسلسل جاری ہے، بھارتی حکومت کی طرف سے تین نئے زرعی قوانین کی منسوخی کا مطالبہ نہ مانے جانے پر کسانوں نے کل 8 دسمبر کو ملک گیر ہڑتال اور احتجاج مزید تیز کرنے کی دھمکی دیدی ہے۔

بھارتی حکومت اور کسانوں کے درمیان گزشتہ روز ہوئے پانچویں دور کے مذاکرات بے نتیجہ رہے، مذاکرات میں کسان وفد نے تینوں نئے زرعی قوانین واپس لینے کے مطالبے پر ہاں یا نہیں میں جواب طلب کیا۔

حکومت کی جانب سے مطالبات نہ مانے جانے پر بھارتی کسانوں نے 8 دسمبر کو ملک گیرہڑتال کا اعلان کیا ہے اور کہا ہے کہ مطالبات نہ مانے تو احتجاج مزید تیز کردیں گے۔

بھارتی ٹریڈیونینوں اور دیگر تنظیموں نے بھی کسان تحریک کی حمایت کا اعلان کردیا ہے، بھارتی ریاستوں ہریانہ، پنجاب، اترپردیش اور متعدد ریاستوں میں کسانوں کا احتجاج جاری ہے۔

واضح رہے کہ اس سال ستمبر کے مہینے میں مودی سرکار نے زرعی اصلاحات کے نام پر ایک نیا قانون منظور کیا تھا جس کے تحت اہم زرعی اجناس کی کم سے کم قیمتوں کے تعین پر حکومت کا کنٹرول مکمل طور پر ختم کرتے ہوئے نجی سرمایہ کاروں کو آزادی دے دی گئی ہے کہ وہ کسانوں سے براہِ راست بھاؤ تاؤ کرکے اپنی من پسند قیمت پر زرعی اجناس خرید سکیں۔

اس بل کی منظوری کے خلاف بھارتی کسانوں کا احتجاج جاری ہے اور حالیہ " دہلی چلو" مہم کے تحت لاکھوں کسان بھارتی دارالحکومت دہلی کا گھیرا تنگ کرچکے ہیں۔

News Code 1904259

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 5 =