اسرائيلی وزیر اعظم کا سعودی عرب کا دورہ/ ولیعہد محمد بن سلمان سے ملاقات

اسرائیل کے خونخوار وزیراعظم نیتن یاہونے موساد کے چیف کے ہمراہ سعودی عرب کا دورہ کیا ہے جہاں اس نے امریکی وزیر خارجہ پمپئوکی موجودگی میں سعودی عرب کے غدار اور خونخوار ولیعہد محمد بن سلمان سے ملاقات اور گفتگو کی۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسرائیل کے ٹی وی چینل 7 نے فاش کیا ہے کہ اسرائیل کے خونخوار وزیراعظم نیتن یاہونے موساد کے چیف کے ہمراہ سعودی عرب کا دورہ کیا ہے جہاں اس نے امریکی وزیر خارجہ پمپئوکی موجودگی میں سعودی عرب کے غدار اور خونخوار ولیعہد محمد بن سلمان سے ملاقات اور گفتگو کی۔  اسرائیلی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ وزیراعظم نیتن یاہو ملک کی خفیہ ایجنسی موساد کے سربراہ یوسی کوہن کے ہمراہ غیر اعلانیہ طور پر سعودی عرب پہنچے اور سعودی ولیعہد محمد بن سلمان سے ملاقات کی۔

اسرائیلی حکام نے یہ بھی دعویٰ کیا اس غیر اعلانیہ ملاقات میں امریکی وزیر خارجہ مائیک پمپئو بھی موجود تھے جو اس وقت یورپ اور مشرق وسطیٰ کے 8 ممالک کے دورے پر ہیں۔

پانچ گھنٹے پر محیط اسرائیل اور سعودی عرب کے اعلیٰ سطح کی ملاقات تبوک کے شہر نیوم میں ہوئی۔ اس سے کئی گھنٹے قبل امریکی وزیر خارجہ نے کہا تھا کہ ولیعہد سے ملاقات میں ایک بڑی کامیابی حاصل ہوئی ہے۔

پروازوں کا ڈیٹا رکھنے والی ویب سائٹ ’فلائٹ ریڈار 24 ڈاٹ کام‘ پر تل ابیب کے انٹرنیشنل ایئرپورٹ سے نجی جیٹ طیارے گلف اسٹریم IV کی  5 بجکر 40 منٹ پر پرواز بھرنے اور سعودی شہر نیوم میں لینڈنگ اور 5 گھنٹے بعد اسی راستے سے تل ابیب واپسی کا ڈیٹا موجود ہے۔ عرب ذرائع‏ کے مطابق متحدہ عرب امارات اور بحرین کے اسرائیل کے ساتھ سفارتی تعلقات کے بعد سعودی عرب بھی اسرائیل کے ساتھ تعلقات برقرار کرنے کے لئے بے چین ہے اور سعودی عرب کی ایما اور اشاروں پر متحدہ عرب امارات اور بحرین نے اسرائیل کے ساتھ سفارتی تعلقات قائم کئے ہیں۔

News Code 1904056

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 14 =