ایران نے القاعدہ دہشت گرد گروہ کے اہم کمانڈر کی ایران میں ہلاکت کے اسرائیلی دعوے کو رد کردیا

اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے القاعدہ دہشت گرد گروہ کے اعلی کمانڈر کی ایران میں ہلاکت کے اسرائیلی دعوے کو سختی کے ساتھ رد کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان سعید خطیب زادہ نے القاعدہ کمانڈر کی ایران ہلاکت کے بارے میں اسرائيل دعوے کے متعلق صحافیوں کے سوال کے جواب میں القاعدہ دہشت گرد گروہ کے اعلی کمانڈر کی ایران میں ہلاکت کے اسرائیلی دعوے کو سختی کے ساتھ رد کردیا ہے۔

خطیب زادہ نے ایران میں القاعدہ دہشت گرد کی موجودگی کو سختی کے ساتھ رد کرتے ہوئے کہا کہ القاعدہ دہشت گرد تنظیم امریکہ ، اسرائیل اور ان کے ابتحادیوں کی پیداوار ہے جس کا ایران سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ انھوں نے کہا کہ امریکہ اور اسرائیل اپنے دہشت گردانہ اقدام اور جرائم کو چھپانے کے لئے ایران کو دہشت گرد گروہوں سے جوڑنے کی ناکام کوشش کرتے رہتے ہیں۔ خطیب زادہ نے کہا کہ القاعدہ دہشت گرد تنظیم کے اعلی کمانڈر کی ایران میں ہلاکت کی خبـر بھی امریکی اور اسرائيلی جھوٹ کا حصہ ہے ۔ انھوں نے کہا کہ ذرائع ابلاغ کو خبر نشر کرنے سے قبل اس کی حقیقت کو جاننا چاہیے۔ واضح رہے کہ اسرائیلی حکام نے ایک رپورٹ میں دعوی کیا تھا کہ اس کے ایجنٹوں نے ایران میں القاعدہ دہشت گرد تنظیم کے سیکنڈ ان کمانڈ عبداللّٰہ احمد عبداللّٰہ المعروف ابو محمد المصری کو ایران میں ہلاک کر دیا ہے۔جبکہ ایران نے اسرائیل کے اس دعوے کو جھوٹا اور بے بنیاد قراردیکر رد کردیا ہے۔

News Code 1903920

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 2 =