صدر ٹرمپ کا صدارتی انتخاب میں چوری اور دھاندلی کے خلاف احتجاجی ریلیوں پرغور

صدر ٹرمپ نے امریکی صدارتی انتخاب میں اپنی شکست پر اپوزيشن پرالیکشن میں بڑے پیمانے پر دھاندلی اورچوری کرنے کا الزام عائد کیا ہے اور اب وہ نتائج کو تسلیم کرنے کے بجائے ملک بھر میں احتجاجی ریلیوں کے انعقاد پر غور کر رہے ہیں۔

مہر خـبررساں ایجنسی نے فاکس نیوز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ صدر ٹرمپ نے امریکی صدارتی انتخاب میں اپنی شکست پر اپوزيشن پرالیکشن میں بڑے پیمانے پر دھاندلی اورچوری کرنے کا الزام عائد کیا ہے اور اب وہ نتائج کو تسلیم کرنے کے بجائے ملک بھر میں احتجاجی ریلیوں کے انعقاد پر غور کر رہے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق  امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ صدارتی انتخاب میں شکست کے بعد سے تذبذب کا شکار ہیں اور امریکی تاریخ میں پہلی بار کوئی صدر اپنی شکست تسلیم کرنے کے بجائے مزاحمت دکھا سکتے ہیں۔ انتخابی نتائج آنے کے بعد سے صدر ٹرمپ زیادہ تر وقت اپنے گلف کلب میں اہل خانہ، سیاسی مشیروں اور مہمانوں سے ملاقات کر رہے ہیں اور یہ تمام لوگ صدر ٹرمپ کو شکست تسلیم کرنے کا مشورہ دے رہے ہیں۔

ادھر صدر ٹرمپ تجاویز کے برعکس انتخابات میں دھاندلی کا الزام عائد کرکے عدالتی قانونی چارہ جوئی اور عوامی احتجاجی ریلیوں کے ذریعے آنے والی نئی حکومت کیخلاف مہم چلانے پر غور کر رہے ہیں۔

News Code 1903843

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 5 =