افغان قوم تنہا نہیں/دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کے لئے امریکہ کے مد مقابل استقامت پر تاکید

اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے سابق اسپیکر اور فارسی ادب و زبان ادارے کے سربراہ نے تہران میں افغان سفیر کے ساتھ ملاقات میں کابل یونیورسٹی پر دہشت گردانہ حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کے لئے امریکہ کے مد مقابل استقامت ضروری ہے ۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے سابق اسپیکر اور فارسی ادب و زبان ادارے کے سربراہ ڈاکٹر حداد عادل نے تہران میں افغانستان کے سفارتخانہ میں حاضر ہوکر افغان سفیرعبدالغفور لیوال  کے ساتھ ملاقات میں کابل یونیورسٹی پر دہشت گردانہ حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کے سلسلے میں افغان قوم تنہا نہیں اور دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کے لئے امریکہ کے مد مقابل استقامت ضروری ہے ۔

ڈاکٹر حداد عادل نے ایران اور افغانستان کی دو قوموں کو تہذيب و تمدن اوراسلامی ثقافت کی حامل قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ ایران اور افغانستان کے درمیان ثقافتی اتحاد و یکسانیت پائی جاتی ہے۔

حداد عادل نے کابل یونیورسٹی پر حملے کو المناک قراردیتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں نے کابل یونیورسٹی پر حملہ کرکے اور طلباء کو درسی کلاس میں شہید کرکے ثابت کردیا کہ دہشت گرد علم و ثقافت اور انسانیت کے دشمن ہیں۔ طلباء اپنے درس میں مصروف تھے ان کی کسی سے کوئی دشمنی نہیں تھی۔

ڈاکٹر حداد عادل نے " جان پدر کجا ہستی ""  باپ کی جان کہاں ہو" کے جملہ کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ جملہ اگر کسی دوسری زبان میں ہوتا تو اس کی یہ تاثیر نہیں ہوتی ۔ انھوں نے کہا کہ کابل یونیورسٹی پر حملے کے بعد ایرانی شعراء نے افغان قوم کے ساتھ دلی ہمدردی اور یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے  چند دنوں میں سیکڑوں اشعار کہے ہیں اور سب اشعار کا ردیف و قافیہ یہی ہے " جان پدر کجا ہستی؟ ۔

جناب حداد عادل نے کہا کہ فارسی زبان ، ایران اور افغانستان کی مشترکہ میراث ہے ۔ ہم فارسی زبان و ادب ادارے کی جانب سے افغان حکومت اور عوام کو کابل یونیورسٹی کے درناک واقعہ پر تعزیت اور تسلیت پیش کرتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ہم افغان قوم اور حکومت کو ماضی کی طرح  تنہا نہیں چھوڑیں گے اور ہمارا یہ پیغام افغان قوم اور حکومت کو پہنچا دیں۔

افغان سفیر نے بھی اس  ملاقات میں ایران کو برادر اور دوست ملک قراردیتے ہوئے کہا کہ ایران نے ہمیشہ مشکل وقت میں افغان قوم کی  بڑھ چڑھ کر حمایت اور تعاون کیا ہے اور ہم ایران کی ہمدردی اور تعاون  پر ایرانی عوام اور حکومت کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔

News Code 1903814

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 6 =