جوبائیڈن کو وہائٹ ہاؤس تک پہنچنے کے لئے صرف 5 الیکٹورل ووٹس درکار

امریکی صدارتی انتخاب کے نتائج فیصلہ کن مرحلے کی طرف بڑھ رہے ہیں اور امریکی ڈیموکریٹک پارٹی کے صدارتی امیدوار جو بائیڈن کو وہائٹ ہاؤس تک پہنچنے کے لئے صرف 5 الیکٹورل ووٹس درکارہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایسوسی ایٹڈ پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکی صدارتی انتخاب کے نتائج فیصلہ کن مرحلے کی طرف بڑھ رہے ہیں اور امریکی ڈیموکریٹک پارٹی کے صدارتی امیدوار جو بائیڈن کو وہائٹ ہاؤس تک پہنچنے کے لئے صرف 5 الیکٹورل ووٹس درکارہیں۔ ووٹوں کی گنتی اختتامی مرحلے پر داخل ہوچکی ہے اور امید ہے کہ اگلے چند گھنٹوں کے دوران تمام ریاستوں سے مکمل، حتمی لیکن غیر سرکاری نتائج کا اعلان کردیا جائے گا۔ فی الحال 538 الیکٹورل ووٹس میں سے 265 الیکٹورل ووٹس حاصل کرنے کے بعد ڈیموکریٹک پارٹی کے امیدوار جو بائیڈن فیصلہ کن فتح کے قریب پہنچ چکے ہیں۔ امریکہ میں صدارتی امیدوار کی حتمی فتح کےلیے ضروری ہوتا ہے کہ وہ 270 یا زیادہ الیکٹورل ووٹس حاصل کرے۔

ادھرموجودہ امریکی صدر اور ری پبلکن امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ 214 الیکٹورل ووٹس حاصل کرسکے ہیں۔ اب ان کی جیت کا مکمل دار و مدار سوئنگ اسٹیٹس پر ہے۔ البتہ امریکی سیاسی مبصرین کا کہنا ہے کہ اگر ٹرمپ کو سوئنگ اسٹیٹس سے بھی تمام الیکٹورل ووٹس مل جائیں تب بھی وہ مجموعی طور پر 268 الیکٹورل ووٹ ہی حاصل کرپائیں گے۔

اطلاعات کے مطابق امریکہ  صرف چند ریاستوں سے انتخابات کے حتمی  نتائج آنے باقی ہیں، تقریباً 14 کروڑ ووٹوں کی گنتی مکمل ہوچکی ہے جو خود امریکی تاریخ میں صدارتی انتخاب کے دوران ڈالے گئے ووٹوں کی سب سے زیادہ تعداد بھی ہے۔

واضح رہے کہ امریکہ میں ووٹروں کی مجموعی تعداد 24 کروڑ کے لگ بھگ ہے۔ 2016 کے صدارتی انتخاب میں، جس کے نتیجے میں ڈونلڈ ٹرمپ امریکی صدر بنے تھے، 59.2 فیصد امریکی ووٹروں نے اپنا حقِ رائے دہی استعمال کیا تھا۔ اب تک کی گنتی کے مطابق یہ شرح 60 فیصد کے قریب پہنچ رہی ہے اور بعض سیاسی مبصرین نے یہاں تک پیش گوئی کردی ہے کہ یہ شرح 65 فیصد یا اس سے بھی زیادہ ہوسکتی ہے۔

News Code 1903785

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha