امریکہ میں 59 ویں صدارتی انتخابات کے لیے ووٹنگ کا سلسلہ جاری

امریکہ میں 59 ویں صدارتی انتخابات کے لیے ووٹنگ کا سلسلہ جاری ہے اب تک کے ایگزیٹ پولز میں جوبائیڈن کو صدر ٹرمپ پر معمولی برتری حاصل ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکہ میں 59 ویں صدارتی انتخابات کے لیے ووٹنگ کا سلسلہ جاری ہے اب تک کے ایگزیٹ پولز میں جوبائیڈن کو صدر ٹرمپ پر معمولی برتری حاصل ہے۔ 

اطلاعات کے مطابق آج امریکہ میں ووٹرز اپنے حق رائے دہی کا استعمال کر رہے ہیں جس کے لیے 74 سالہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور 77 سالہ ڈیموکریٹ امیدوار جو بائیڈن کے درمیان کانٹے کا مقابلہ متوقع ہے۔ ایگزیٹ پولز کے مطابق جوبائیڈن کو امریکی صدر ٹرمپ پر برتری حاصل ہے دونوں رہنمائوں کا جیت کے لیے سوئینگ اسٹیٹس خصوصی طور پر پنسلوانیا، فلوریڈا، میشی گن اور جنوبی کیرولینا کی طرف نظریں جمی ہوئی ہیں۔ جو بائیڈن نے نیو ہیمپشائر کے ایک چھوٹے سے گاؤں سے کامیاب ہو گئے ہیں جس کی کل آبادی پانچ افراد پر مشتمل ہے ۔

دوسری جانب صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی خواہش ہے کہ وہ جارج بش سینیئر کی طرح صرف ایک دور کے لیے صدر بننے والے آخری امریکی صدر کا ریکارڈ نہ توڑدیں۔ 10 کروڑ 90 لاکھ کے قریب افراد صدارتی انتخاب میں پہلے ہی ووٹ کاسٹ کرچکے ہیں۔

گزشتہ صدارتی انتخاب میں ٹرن آؤٹ 58.1 فیصد تھا جبکہ اس مرتبہ امید ہے کہ یہ 60 فیصد کے آس پاس ہوسکتا ہے۔ اگر اتنی تعداد میں امریکی عوام ووٹ دیں گے تو یہ ممکنہ طور پر ایک صدی میں سب سے بڑی تعداد ہوگی۔

واضح رہے کہ صدرٹرمپ یا جوبائیڈن کو صدارت سنبھالنے کیلئے 538 میں سے 270 الیکٹورل ووٹس کی ضرورت ہے، پولنگ کے مکمل نتائج آنے اور ان کے حتمی سرکاری اعلان کیلئے رواں سال 14 دسمبر کی تاریخ رکھی گئی ہے۔

News Code 1903754

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha