امریکہ میں صدارتی انتخابات کے بعد مسلح تصادم کا خطرہ

امریکی فیڈرل بورڈ آف انویسٹیگیشن (ایف بی آئی) نے منگل کے روز ہونے والے امریکی صدر کے انتخاب کے موقع پر ریاست اوریگون کے سب سے بڑے اور سب سے زیادہ آبادی والے شہر پورٹ لینڈ میں مسلح تصادم کا انتباہ جاری کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایسوسی ایٹڈ پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکی فیڈرل بورڈ آف انویسٹیگیشن (ایف بی آئی) نے منگل کے روز ہونے والے امریکی صدر کے انتخاب کے موقع پر ریاست اوریگون کے سب سے بڑے اور سب سے زیادہ آبادی والے شہر پورٹ لینڈ میں مسلح تصادم کا انتباہ جاری کیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق یہ  وہ شہر ہے جو بد امنی کے سلسلے میں ملک میں پائی جانے والی تقسیم کی علامت بن کر سامنے آیا ہے۔

ریاست اوریگون میں ڈیموکریٹس کے گڑھ میں نسل پرستی کے خلاف بہت بڑی بڑی ریلیاں نکالی گئی تھیں جس کے دوران وفاقی افسران اور دائیں بازو سے تعلق رکھنے والی ملیشیاز کے آنے سے اشتعال انگیزی دیکھی گئی۔ چنانچہ آج  ہونے والے شدید منقسم ووٹ کے موقع پر سڑکوں پر زیادہ ہلاکت خیز اور پُر تشدد کارروائیوں کا خدشہ ہے۔

انتخاب کے نتیجے میں ڈونلڈ ٹرمپ یا جو بائیڈن کی کامیابی یا عالمی وبا کے پیش ِنظر ڈاک سے ووٹنگ میں اضافے کی وجہ سے گنتی میں تاخیر کے باعث واضح نتائج نہ ہونے کی صورت میں مظاہروں کی منصوبہ بندی ہے لہٰذا ڈاؤن ٹاؤن میں موجود کاروباری مراکز میں لوگوں نے شیشے کی کھڑکیوں پر لکڑی کے بورڈ لگا دیئے ہیں۔ اس ضمن میں ایف بی آئی پورٹ لینڈ کے خصوصی ایجنٹ رین کینن نے کہا کہ میرے لیے سب سے تشویشناک بات مخالف گروہوں کے مابین مسلح تصادم کا ہونا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’اگر گرما گرمی بڑھی تو یہ صورتحال خطرناک مرحلے میں داخل ہوسکتی ہے اور نتیجہ ایک بدقسمت یا افسوسناک پر تشدد عمل کی صورت میں نکل سکتا ہے۔ ایف بی آئی ایجنٹ نے مزید کہا کہ پورٹ لینڈ کے 250 دفاتر کو ووٹر پر دباؤ ڈالنا، فراڈ اور غیر ملکی سائبر دھمکیوں جیسے انتخابی جرائم کی روک تھام کے لیے اضافی وسائل فراہم کردیے گئے ہیں۔

News Code 1903750

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 4 =