بھارتی وزير اعظم کے ہاتھ پر طوطا نے بیٹھنے سے انکار کردیا

بھارتی ریاست گجرات میں چڑیا گھر کے افتتاح کے موقع پر بھارتی وزیراعظم کو اس وقت سبکی اور شرمندگی کا سامنا ہوا جب متعدد بار کوشش کے باوجود طوطا مودی کے ہاتھ پر نہ بیٹھا ۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارتی ریاست گجرات میں چڑیا گھر کے افتتاح کے موقع پر بھارتی وزیراعظم کو اس وقت سبکی اور شرمندگی کا سامنا ہوا جب متعدد بار کوشش کے باوجود طوطا مودی کے ہاتھ پر نہ بیٹھا ۔ اطلاعات کے مطابق بھارتی ریاست گجرات میں چڑیا گھر کے افتتاح کے موقع پر بھارتی وزیراعظم کو سبکی کا سامنا ، کیواڈیا میں سردار پٹیل چڑیا گھر میں اجنبی طوطے کے ہاتھوں مودی کو شرمندگی اٹھانی پڑی، بارہا کوشش کے باوجود طوطا مودی کے ہاتھ پر نہ بیٹھا۔

بھارتی وزیرِ اعظم مودی جب چڑیا گھر کے اس حصے میں آئے جہاں پرندے موجود تھے تو اس دوران ایک میکا نسل کے طوطے نے مودی کے ہاتھ پر بیٹھنے سے انکار کردیا۔

اس واقعے کی فوٹیج انڈین ٹی وی پر نشر ہوئی اور اس کے بعد اس کے چند کلپ سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئے۔

خیال رہے کہ وزیر اعظم مودی کے چڑیا گھر کے دورے کے مناظر ٹیلی ویژن پر براہ راست دکھائے جا رہے تھے جب بھارتی وزیرِ اعظم کے ہاتھ پر کپڑا ڈالا گیا اور انھوں نے اپنا ہاتھ آگے بڑھایا تو اس طوطے نے ان سے دور سرکنا شروع کر دیا۔

اس کی عدم دلچسپی دیکھتے ہوئے نریندر مودی دوسرے طوطوں کی جانب متوجہ ہوئے لیکن اتنے میں چڑیا گھر کی ایک اہلکار نے اس طوطے کو اپنے بازو پر اٹھایا اور اسے وزیرِ اعظم کے قریب لے آئیں۔

نریندر مودی نے ایک مرتبہ پھر ہاتھ بڑھایا لیکن طوطا اہلکار کے بازو سے ان کے کندھے تک آ پہنچا لیکن وزیرِاعظم کے ہاتھ پر نہیں بیٹھا۔ ایسے میں ٹی وی پر تبصرہ کرتے ہوئے ایک خاتون اینکر نے کہا کہ ʼیہ شرمیلا لگ رہا ہے، جسے منانے کی ضرورت پڑ رہی ہے۔شاید اسے دھمکی لگائی گئی یا شاید اسے خود ہی عقل آ گئی اور بالآخر طوطا وزیرِ اعظم کے پاس آ گیا۔

News Code 1903731

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha