آزادی اظہار کا مطلب دوسروں کی توہین ، اذیت اور آزار پہنچانا نہیں

کینیڈا کے وزیراعظم جسٹں ٹروڈو نے فرانس میں گستاخانہ خاکوں کی تشہیر کے حوالے سے کیے گئے سوال کے جواب میں کہا ہے کہ آزادی اظہار حدود کے اندر ہونی چاہیے۔ آزادی اظہار کا مطلب دوسروں کی توہین اور انھیں اذیت و آزار پہنچانا نہیں ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے غیر ملکی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ کینیڈا کے وزیراعظم جسٹں ٹروڈو نے فرانس میں گستاخانہ خاکوں کی تشہیر کے حوالے سے کیے گئے سوال کے جواب میں کہا ہے کہ آزادی اظہار حدود کے اندر ہونی چاہیے۔ آزادی اظہار کا مطلب دوسروں کی توہین اور انھیں اذیت و آزار پہنچانا نہیں ہے۔ کینیڈا کے وزیر اعظم نے کہا کہ ہم آزادی اظہار کے حق کا دفاع کرتے ہیں تاہم اس کی حدود ہوتی ہیں اور اسے کسی کو اذیت پہنچانے کے لیے استعمال نہیں ہونا چاہیے۔ ہمیں دوسروں کا احترام خود پر لازم سمجھنا چاہیے اور بے سبب اپنے معاشرے میں شامل اور اس سیارے کے کسی بھی باسی کو جانتے بوجھتے اذیت پہنچانے کے لیے اپنی آزادی کا  استعمال نہیں کرنا چاہیے۔  کینیڈا کے وزیرا عظم نے خود کو فرانسیسی صدر کے بیانات سے لاتعلق رکھا اور آزادی اظہار کے ذمے دارانہ استعمال پر زور دیا۔

انہوں نے کہا کہ کینیڈا جیسے متنوع معاشرے میں ہمیں اپنے الفاظ کے اثرات سے باخبر ہونا چاہیے اور بالخصوص پہلے ہی سے امتیازی سلوک اور تفریق کے شکار طبقات کا خاص خیال رکھنا چاہیے۔ علاوہ ازیں انہوں نے فرانس میں کے علاقے نیس میں ہونے والے حملے کی بھی مزمت کی۔

واضح رہے کہ فرانس میں گستاخانہ خاکوں کی تشہیر اور صدر میکرون کی جانب سے اس قبیح عمل کی تائید کے بعد پوری دنیا کے مسلمانوں میں فرانس کے خلاف شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے۔

News Code 1903712

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 1 =