ایران ہر ملک کو ہتھیار فروخت نہیں کرےگا/ ہم خطے کو اسلحہ کا ڈھیر نہیں بنانا چاہتے

اسلامی جمہوریہ ایران کی حکومت کے ترجمان نے کہا ہے کہ ایران ہر ملک کو ہتھیار فروخت نہیں کرےگا کیونکہ ایران خطے کو ہتھیاروں کے ڈھیر میں تبدیل کرنے کے خلاف ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی حکومت کے ترجمان علی ربیعی نے کہا ہے کہ ایران ہر ملک کو ہتھیار فروخت نہیں کرےگا کیونکہ ایران خطے کو ہتھیاروں کے ڈھیر میں تبدیل کرنے کے خلاف ہے۔

ایرانی حکومت کے ترجمان نے ایران کے خلاف اسلحہ کی پابندیوں کے خاتمہ اور ایران کی حقانیت و سچائی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ دنیا نے ایران کی صداقت ، حقانیت اور سچائي کو تسلیم کرلیا ہے اور عالمی سطح پرکوئی بھی ملک اب امریکہ کے جھوٹے اور غلط پروپیگنڈے کو سننے کے لئے تیار نہیں ہے۔

ربیعی نے کہا کہ دنیا کا کوئی بھی ملک امریکہ کی پیروی کرنے کے لئے تیار نہیں اور ایران کے خلاف ابتدا سے جو غلط اور غیر قانونی پابندیاں تھیں وہ ختم ہوگئی ہیں۔

علی ربیعی نے کہا کہ ہم ہتھیاروں کے طرفدار نہیں ہم جنگ کے حامی نہیں ہم امن و صلح کے خواہاں ہیں اس لئے ہم خطے کو اسلحہ کے ڈھیر میں تبدیل کرنے کے خلاف ہیں جبکہ امریکہ خطے کو اسلحہ کے ڈھیر میں تبدیل کرکے اس علاقہ کو تباہ کرنے کی راہ پر گامزن ہے۔ ایرانی حکومت کے ترجمان نے کہا کہ ہماری پالیسی دفاعی طاقت اور قدرت کو مضـوط بنانے پر استوار ہے۔ ہم نے آج تک کسی بھی جنگ کا آغاز نہیں لیکن مسلط کردہ جنگوں میں ہم نے دفاع کیا ہے۔

انھوں نے کہا کہ ہم ہتھیاروں کی فروخت کے سلسلے میں اپنے شرائط پر عمل کریں گے اور خطے کو اسلحہ کے ذخیرہ میں تبدیل کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔

News Code 1903568

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 3 =