ایران پر اسلحہ کی خرید و فروخت کے سلسلے میں اقوام متحدہ کی پابندیوں کا خاتمہ

اقوام متحدہ میں ایران کے نمائندے نے اعلان کیا ہے کہ مشترکہ ایٹمی معاہدے کے تحت ایران پر اسلحہ کی خرید و فروخت کے سلسلے میں اقوام متحدہ کی پابندیاں ختم ہوگئیں

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ میں ایران کے مستقل مندوب مجید تخت روانچی  نے اعلان کیا ہے کہ مشترکہ ایٹمی معاہدے کے تحت ایران پر اسلحہ کی خرید و فروخت کے سلسلے میں اقوام متحدہ کی پابندیاں ختم ہوگئی ہیں انھوں نے کہا کہ ایٹمی ڈیل کے تحت ایران پراقوام متحدہ کی جانب سے اسلحہ کی خرید و فروخت پر پابندی کی مدت کا آج سے خاتمہ ہوگیا ہے  اقوام متحدہ میں ایرانی نمائندے کا کہنا ہے کہ امریکہ مشترکہ ایٹمی معاہدے سے  یکطرفہ طور پرالگ ہوکر تنہا رہ گیا۔

مشترکہ ایٹمی معاہدہ  ایران، امریکہ، برطانیہ، جرمنی، فرانس، یورپی یونین، روس اور چین کے درمیان ہوا تھا  اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے قرارداد کے ذریعے اس معاہدے کی توثیق کی تھی۔

اقوام متحدہ نے امریکہ کی جانب سے پابندیوں کو مسترد کردیا ہے اور وعدہ کیا ہے کہ وہ اپنی جانب سے پابندیاں ختم کرنے کی دی گئی تاریخ پر قائم ہے۔ ذرائ‏ کے مطابق امریکہ کو تاریخ میں پہلی مرتبہ سکیورٹی کونسل میں شکست اور ناکامی کا سامنا ہوا۔ اور ایران نے اسلحہ کی پابندیاں امریکہ نے قائم رکھنے کی ہر ممکن کوشش کی لیکن اس کے حامیوں نے بھی اس کا ساتھ نہیں دیا۔

News Code 1903490

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha