آسام میں ہندو لڑکیوں کی مسلمانوں سے شادیوں کے خلاف کریک ڈاؤن

بھارتی ریاست آسام میں بی جے پی کی حکومت نے ہندو لڑکیوں کی مسلمانوں سے شادیوں کے خلاف کارروائی کا اعلان کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے بھارتی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارتی ریاست آسام میں بی جے پی کی حکومت نے ہندو لڑکیوں کی مسلمانوں سے شادیوں کے خلاف کارروائی کا اعلان کیا ہے۔

بی جے پی کی حکومت ہندو لڑکیوں کی مسلمان لڑکوں سے شادیوں کے بڑھتے رجحان پر سٹپٹا گئی اور اسے لو جہاد کا نام دے کر روکنے کا اعلان کردیا۔بھارتی میڈیا کے مطابق ریاستی وزیر خزانہ و صحت ہیمنت بسما شرما نے کہا کہ آسام میں ہندو لڑکیوں کی مسلمان لڑکوں سے شادیوں کا رجحان بڑھ رہا ہے، جسے روکا جائے گا۔ ہیمنت نے کہا کہ مسلمان لڑکے فیس بک پر ہندو لڑکیوں سے دوستیاں کرتے ہیں اور پھر یہ دوستیاں شادیوں میں بدل جاتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم اپنی بہنوں اور بیٹیوں کو مسلمان لڑکوں سے بچانے کے لیے ایسی شادیوں کے خلاف لڑیں گے۔

News Code 1903451

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 14 =