پاکستان بھر میں شہدائے کربلا کا چہلم مذہبی عقیدت و احترام سے منایا جارہا ہے

پاکستان میں شہدائے کربلا کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے ملک کے مختلف شہروں میں چہلم کے مرکزی جلوسوں کا سلسلہ جاری ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان میں شہدائے کربلا کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے ملک کے مختلف شہروں میں چہلم کے مرکزی جلوسوں کا سلسلہ جاری ہے۔

کراچی میں چہلم شہدائے کربلا کا مرکزی جلوس صبح 9 بجے مارٹن روڈ امام بارگاہ سے نشر پارک پہنچ گیا، جہاں مرکزی مجلس منعقد کی گئی ہے جس کے بعد مرکزی جلوس ایک بجے نشتر پارک سے برآمد ہوا۔

کراچی میں چہلم کے جلوسوں کے روٹ پر اور اطراف میں موبائل فون سروس بند رہے گی، جبکہ شہر میں موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر بھی پابندی عائد کی گئی ہے۔

کوئٹہ میں شہدائے کربلا کے چہلم کے موقع پر دوجلوس نکالے گئے، مرکزی جلوس علمدار روڈ پر صبح 10بجے برآمد ہوگیا ہے جبکہ چہلم کے سلسلے میں دوسرا جلوس ہزارہ ٹاون میں نکالا گیا۔

پولیس حکام کے مطابق کوئٹہ میں سیکیورٹی کے لیے 6ہزار سے زائد پولیس اور دیگر اہلکار تعینات کیے گئے ہیں، کوئٹہ میں موبائل فون سروس صبح 9 سے رات 8 بجے تک بندرہے گی۔ اس کے علاوہ کوئٹہ کے 3 تھانوں کی حدودمیں موٹرسائیکل چلانے پر ایک دن کے لیے پابندی عائد ہے۔

سرگودھا بھر میں چہلم کے سلسلے میں 13جلوس اور 7 مجالس منعقد ہوں گی۔

ڈی آئی خان میں چہلم شہدائےکربلا کے موقع پر سہ پہر 4 بجےمجلس عزاء اور زنجیر زنی ہوگی، جس کے بعد شام7 بجےامام بارگاہ بموں شاہ سےعلم اور ذوالجناح کا جلوس برآمد ہوگاجو کہ مقررہ راستوں سے ہوتا ہوا امام بارگاہ زین العابدین پر رات 12 بجے اختتام پذیر ہوگا۔

راولپنڈی میں چہلم شہدائے کربلا کا مرکزی جلوس دن 11 بجے امام بارگاہ عاشق حسین سے برآمد ہوا۔

News Code 1903335

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 11 =