سوئٹزر لینڈ میں ہیکرز نے یونیورسٹی کے اہلکاروں کی تنخواہیں چرالیں

ہیکرز نے سوئٹزرلینڈ کی متعدد یونیورسٹیوں کے کمپیوٹر سسٹم ہیک کر کے سینکڑوں اہلکاروں کی تنخواہیں چُرا لیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ہیکرز نے سوئٹزرلینڈ کی متعدد یونیورسٹیوں کے کمپیوٹر سسٹم ہیک کر کے سینکڑوں اہلکاروں کی تنخواہیں چُرا لیں۔

سوئٹزرلینڈ کی سرکاری یونیورسٹیوں کی نمائندہ تنظیم کی ڈائریکٹر جنرل نے کہا ہے کہ ہیکرز کے اس غیر قانونی اقدام سے متعدد یونیورسٹیاں متاثر ہوئی ہیں۔ ہیکرز نے سوئٹزرلینڈ کے معتبر اور قدیم ترین تعلیمی ادارے ’بیزل یونیورسٹی‘ سمیت تین یونیورسٹیوں کے کمپیوٹر سسٹم میں داخل ہوکر لاکھوں سوئس فرانکس ہتھیا لیے۔ ہیکنگ کے لیے ’فشنگ‘ کا طریقہ کار سائبر کرائم کے زمرے میں آتا ہے جس کے تحت دھوکہ دہی کے ذریعے شہریوں سے ذاتی معلومات حاصل کی جاتی ہیں۔

بتایا جاتا ہے کہ اس سے قبل ہیکرز نے زیورچ یونیورسٹی کو بھی نشانہ بنایا تھا۔ تاہم یونیورسٹی کی انتظامیہ ہیکنگ کی کوششوں کو ناکام بنانے میں کامیاب رہی۔

News Code 1903286

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 11 =