عرب لیگ کا اسرائیل اور امارات کے درمیان معاہدے کی مذمت کرنے سے انکار

عرب لیگ نے متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان ہونے والے معاہدے کی مذمت کے لیے فلسطین کی جانب سےجمع کروائی گئی قرار داد کے مسودے کو خارج کردیا ہے۔

 مہر خبررساں ایجنسی نے الجزیرہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ عرب لیگ نے  متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان ہونے والے معاہدے کی مذمت کے لیے فلسطین کی جانب سےجمع کروائی گئی  قرار داد کے مسودے کو خارج کردیا ہے۔

 اطلاعات کے مطابق عرب ممالک کے وزرائے خارجہ کی ویڈیو کانفرنس میں فلسطینی قیادت کی جانب سے امارات اور اسرائیل کے مابین ہونے والے معاہدے کی مذمت کے لیے قرار داد کا مسودہ جمع کروایا گیا جس  پر اتفاق نہیں ہوسکا تاہم عرب  ممالک اور فلسطینی قیادت نے بعد ازاں قرارداد میں 2002 کے عرب امن معاہدے اور دو ریاستی حل پر زور دینے پر اتفاق کیا۔

ذرائع کے مطابق بعض بحرین  نے امارات اور اسرائیل کے مابین تعلقات کو معمول پر لانے کے لیے کیے گئے معاہدے کو جائز تسلیم کرنے کی شق بھی قرارداد میں شامل کروانے کی کوشش کی ۔ واضح رہے کہ گزشتہ ماہ امارات اور اسرائیل کے مابین امریکہ کی ثالثی سے ہونے والے معاہدے پر دستخط کی رسمی تقریب آئندہ ہفتے امریکہ میں ہونے والی ہے ۔ فلسطین اس تقریب سے قبل معاہدے پر عرب لیگ سے مذمتی قرارداد منظور کروانا چاہتا تھا جس میں اسے کامیابی حاصل نہیں مل سکی اور اس طرح عرب لیگ کا منافقانہ چہرہ دنیا کے سامنے مزید نمایاں ہوگیا ہے۔

News Code 1902843

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 8 =