سعودی عرب میں امام بارگاہ پر حملے میں ملوث 2 دہشت گردوں کو پھانسی کی سزا سنادي گئی

سعودی عرب میں 2014 کو شیعہ مسلمانوں کے مقدس مقام اور امامبارگاہ میں اجتماع پر حملہ کرنے والے ملزمان میں سے مزید دو کو پھانسی کی سزا سنائی گئی ہے۔

 مہر خبررساں ایجنسی نے سعودی عرب کے ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ سعودی عرب میں 2014 کو شیعہ مسلمانوں کے مقدس مقام اور امامبارگاہ  میں اجتماع پر حملہ کرنے والے ملزمان میں سے مزید دو کو پھانسی کی سزا سنائی گئی ہے۔

 اطلاعات کے مطابق مقامی عدالت میں 2014 کو الاحسا کے شیعی مقدس مقام پر ہونے والے ایک اجتماع میں عاشورا کے روز کیے گئے حملے کے مقدمے کی سماعت ہوئی جس میں مزید دو ملزمان کو پھانسی کی سزا سنائی گئی ہے۔

اس سے قبل 2 ستمبر کو ہونے والی سماعت میں بھی 7 ملزمان کو اسی مقدمے میں پھانسی اور 25 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی۔ سزا پانے والے تمام افراد کا تعلق داعش دہشت گرد تنظیم سے بتایا جاتا ہے۔

واضح رہے کہ نومبر 2014 کو عاشورا کی منابست سے ایک اجتماع میں نقاب پوش مسلح افراد نے اندھا دھند فائرنگ کرکے 8 سے زائد افراد کو شہید اور 9 کو زخمی کردیا تھا۔ شہید ہونے والوں میں 3 بچے اور دو پولیس اہلکار بھی شامل تھے۔

News Code 1902842

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 9 =