مراکش کا اسرائیل کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کی مخالفت کا اعلان

مراکش کے وزیر اعظم سعد الدین العثمانی نے صیہونی حکومت کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کی سخت اور بھرپور مخالفت کا اعلان کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے اسپوٹنک کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ مراکش کے وزیر اعظم سعد الدین العثمانی نے حکمراں جماعت انصاف اور ترقی کے ارکان کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئےاعلان کیا ہے کہ مراکش ، صیہونی حکومت کے ساتھ سفارتی تعلقات کو معمول پر لانے کی سخت اور بھرپور مخالفت کرتا ہے۔ مراکش کے وزير اعظم نے کہا کہ اسرائیل کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کی وجہ سے فلسطینیوں پر اسرائیلی ظلم و ستم میں اضافہ ہوگا اور اسرائیل کو مزید عرب علاقوں کو کنٹرول میں لینے کا موقع ملےگا۔ واضح رہے کہ مراکش نے سن 2000 ء میں فلسطینی انتفاضہ کے بعد اسرائيل کے ساتھ سفارتی  تعلقات کو منقطع کردیا تھا۔ مراکش کی حکمراں جماعت نے اس سے قبل ایک اعلامیہ میں امارات اور اسرائیل کے درمیان سفارتی تعلقات برقرار کرنے کی بھر پور الفاظ میں مذمت بھی کی تھی۔

News Code 1902477

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 13 =