اسرائیل اور امارات مل کر خطے میں فلسطین اور یمن کی طرح امن پیدا کریں گے

اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو نے کہا ہے کہ متحدہ عرب امارات اوراسرائیل مل کرخطےمیں امن کیلئےکام کریں گے اس وقت اسرائیل اور امارات دونوں فلسطین اور یمن میں بھیانک جنگی جرائم کا ارتکاب کررہے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے اسرائیلی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو نے کہا ہے کہ متحدہ عرب امارات اوراسرائیل مل کرخطےمیں امن کیلئےکام کریں گے اس وقت اسرائیل اور امارات دونوں فلسطین اور یمن میں بھیانک جنگی جرائم کا ارتکاب کررہے ہیں۔ اسرائیل کے دہشت گرد وزير اعظم نیتن یاہو نےکہا کہ شدت پسندوں اور دہشتگرد گروہوں سمیت خطےکو درپیش چیلنجز سے مل کر نمٹیں گے۔ اسرائیل نے شام میں داعش دہشت گردوں کو بھر پور مدد فراہم کی ۔

واضح رہے کہ متحدہ عرب امارات (یو اے ای) اور اسرائیل کے درمیان تعلقات کے لیے  13 اگست کو معاہدہ طے پایا تھا، دونوں ممالک کے درمیان سفارتخانہ کھولنے پر بھی اتفاق ہوا۔ متحدہ عرب امارات کی طرف سے اسرائیل کے ساتھ سفارتی تعلقات کے قیام کے بعد فلسطین نے امارات کے ساتھ سفارتی تعلقات ختم کردیئے ہیں اور اپنا سفیر امارات سے ہمیشہ کے لئے واپس بلا لیا ہے۔ ذرائع کے مطابق اس سے قبل امارات اور اسرائیل کے درمیان خفیہ تعلقات تھے جو اب آشکار ہوگئے ہیں دونوں ممالک پہلے بھی داعش جیسے دہشت گردوں کی حمایت کرتے رہے ہیں۔ امارات  نے اسرائیل کے ساتھ سیاسی گٹھ جوڑ کرکے خطے کے امن  واماں کو داؤ پر لگا دیا ہے۔

News Code 1902351

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 14 =