بھارتی حکمراں جماعت کی خاتون شکنتلادیوی  مسلمان خواتین کو ورغلا رہی ہیں

بھارت کی حکمراں جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کی خاتون رہنما شکنتلا دیوی مسلمان لڑکیوں کو ورغلا کر مذہب تبدیل اور ان کی ہندو لڑکوں سے شادی کرانے میں مرکزی کردار ادا کر رہی ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے انڈیا ٹو ڈے  کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارت کی حکمراں جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کی خاتون رہنما شکنتلا دیوی مسلمان لڑکیوں کو ورغلا کر مذہب تبدیل اور ان کی ہندو لڑکوں سے شادی کرانے میں مرکزی کردار ادا کر رہی ہیں۔ 

انڈیا ٹوڈے کے مطابق بی جے پی کی رہنما اور سابق میئر شکنتلا دیوی پر مسلمان لڑکیوں کو جھانسا دیکر مذہب تبدیل اور ہندو لڑکوں سے شادی کرانے کے الزامات متاثرہ مسلم خاندانوں کی جانب سے تواتر کے ساتھ عائد کیے جا رہے ہیں۔

 حال ہی میں علی گڑھ سے لاپتہ ہونے والی ایک مسلمان لڑکی ہندو لڑکے ساتھ منظر عام پر آئی اور اپنی مرضی سے شادی کرنے کا دعویٰ بھی کیا تاہم مذکورہ لڑکی کے بہنوئی کے مطابق ان کی سالی 7 اگست کو لاپتہ ہوئی تھی اور گھر سے زیور بھی غائب تھا۔

ادھر مسلمان لڑکی کی بہن نے پریس کانفرنس میں بی جے پی رہنما شکنتلا دیوی پر بہن کے اغوا کا الزام عائد کرتے ہوئے کہنا تھا کہ میری بہن میڈیا کے سامنے جس کار پر بیٹھ کر منظر عام پر آئی وہ شکنتلا کی کار ہے۔

مذکورہ لڑکی کی بہن نے مزید انکشاف کیا کہ ایسا پہلی مرتبہ نہیں ہوا ہے اس سے قبل بھی شکنتلا دیوی مسلمان لڑکیوں کے مذہب تبدیل کرانے اور شادی کرانے میں پیش پیش  رہی ہیں۔

News Code 1902342

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 11 =