متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کا معاہدہ امریکی ناٹک/ امارات کا منافقانہ چہرہ نمایاں ہوگيا

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزير خارجہ ظریف نے متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان معاہدے کی مذمت اور اسے امریکی ناٹک قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ نے اپنے اتحادی عرب حکمرانوں کا منافقانہ چہرہ نمایاں کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے وزير خارجہ محمد جواد ظریف نے متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان معاہدے کی مذمت اور اسے امریکی ناٹک قراردیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ نے اپنے اتحادی عرب حکمرانوں کا منافقانہ چہرہ نمایاں کردیا ہے۔

ایرانی وزیر خارجہ نے لبنانی صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کا یہ خام خیال ہے کہ وہ اسرائیل اور متحدہ عرب امارات یا بعض دیگر عرب حکمرانوں کے درمیان معاہدے کروا فلسطینیوں کی قسمت کا فیصلہ کر سکتا ہے۔ جواد ظریف نے کہا کہ حقیقت یہ ہے کہ موجودہ امریکی انتظامیہ ثابت کر چکی ہے کہ وہ ہمارے خطے کے سیاسی حقائق سمجھنے سے قاصر ہے۔ ایرانی وزير خآرجہ نے کہا کہ فلسطین کی قسمت کا فیصلہ فلسطینی عوام کریں گے اور ہم فلسطین کے مظلوم مسلمانوں کے ساتھ ہیں۔ ایرانی وزیر خآرجہ نے کہا کہ ہمارے خطے کے عرب حکمرانوں کو عرب عوام کے اندر مقبولیت حاصل نہیں لہذا اسرائیل کے ساتھ  ان کے معاہدوں کی کوئی حیثیت نہیں ہے۔

News Code 1902285

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 0 =