اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے سفارتی تعلقات  امت مسلمہ اور عرب دنیا کے لئے بہت بڑا المیہ

پاکستانی سینیٹراور جماعت اسلامی کے سربراہ سراج الحق نے اسرائیل اور امارات کے تعلقات کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان سفارتی تعلقات پوری مسلم دنیا اور خاص طور پرعرب دنیا کے لیے بہت بڑا المیہ اورسانحہ ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستانی سینیٹراور جماعت اسلامی کے سربراہ  سراج الحق نے اسرائیل اور امارات کے تعلقات کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان سفارتی تعلقات پوری مسلم دنیا اور خاص طور پرعرب دنیا کے لیے بہت بڑا المیہ اورسانحہ ہے۔ انہوں نےحکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ او آئی سی کااجلاس طلب کر کےمتحدہ عرب امارات پر زور دے کہ وہ اُمت مسلمہ کو تقسیم ہونے سے بچانے کے لیے اسرائیل سے معاہدے پر نظرثانی کرے۔

سینیٹر سراج الحق نےکہا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے دوبارہ انتخاب جیتنے کے لیے امت مسلمہ پر شب خون مارا ہے، مگر انھیں یاد رکھنا چاہیے کہ قبلہ اول، مسجد اقصیٰ اور سرزمین فلسطین سے مسلمان اور فلسطینی کسی صورت دستبردار نہیں ہوں گے۔

یہ ہمارے ایمان کا حصہ ہے۔ مسجد اقصیٰ نبی کریم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کا مقام اسراء و معراج ہےاس پر اسرائیل کا ناجائز قبضہ ناقابل قبول ہے اور ناقابل قبول رہے گا۔

News Code 1902269

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 6 =