پاکستان میں طالبان دہشت گردوں کا دہشت گردی اور کئی شخصیات کا اغوا کرنے کا منصوبہ

پاکستان کے انٹیلیجنس اداروں نے خـبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان میں سرگرم وہابی دہشت گرد گروہ پاکستان کی اہم شخصیات کو اغوا کرنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے انٹیلیجنس اداروں نے خـبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان میں سرگرم وہابی دہشت گرد گروہ  پاکستان کی اہم شخصیات کو اغوا کرنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں۔

ذرائع کے مطابق پاکستان میں غیر ملکی عناصر سے منسلک  وہابی دہشت گردوں دوبارہ دہشت گردی اور امن و امان کی صورتحال کو خراب کرنے کے منصوبے بنانا شروع کردیئے ہیں.

پاکستان خفیہ اداروں نے تھریٹ الرٹ نمبر 239 میں کہا ہے کہ یہ دہشت گرد ممکنہ طور پر پاکستان میں خود کش حملے کر سکتے ہیں. ایجنسیوں نے ان خود کش بمباروں کی تصاویر حاصل کرنے میں بھی کامیابی حاصل کی ہے اور پولیس، سی ٹی ڈی سمیت تمام قانون نافذ کرنے والے اداروں کو آگاہ کر دیا گیا ہے۔

تھریٹ الرٹ نمبر 236 میں کہا گیا ہے کہ  وہابی دہشت گرد اور کالعدم تحریک طالبان کی طرف سے بھیجے گئے خود کش بمبار لاہور میں کارروائی کرسکتے ہیں. یہ کارروائی رش والی جگہ پر ہونے کا زیادہ خدشہ ہے۔

تھریٹ الرٹ نمبر 234 میں کہا گیا ہے کہ وہابی دہشت گرد اورکالعدم تنظیم حرکت الضار (ایچ یو اے / جے یو اے) کے تربیتی کیمپ میں حال ہی میں چار خود کش بمبار تیار کیے گئے ہیں جن کے ممکنہ نام شاہین بلال سلیمان اور سعید کوچی ہیں جن کو پاکستان میں کارروائیوں کے لیے بھیجا جائے گا۔

News Code 1902132

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 0 =