خلیفہ حفتر کا ترک صدر کو لیبیا سے دور رہنے کا انتباہ

لیبیا میں سعودی عرب اور امارات کے حمایت یافتہ فوجی جنرل خلیفہ حفتر نے ترک صدر رجب طیب اردوغان کو خبـردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترک صدر اپنے فوجیوں کو لیبیا سے نکال لیں یا پھر مسلح تصادم کے لئے آمادہ ہوجائیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے عرب نیوز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ لیبیا میں سعودی عرب اور امارات کے حمایت یافتہ فوجی جنرل خلیفہ حفتر نے ترک صدر رجب طیب اردوغان کو خبـردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترک صدر اپنے فوجیوں کو لیبیا سے نکال لیں یا پھر مسلح تصادم کے لئے آمادہ ہوجائیں۔

اطلاعات کے مطابق یہ وارننگ تریپولی میں گورنمنٹ آف نیشنل اکورڈ (جی این اے) کے ساتھ تنازع میں لیبین نیشنل آرمی (ایل این اے) کی سربراہی کرنے والے لیبیا کی مشرقی فوج کے جنرل خلیفہ حفتر کی جانب سے دی گئی۔

خلیفہ حفترنے ترک صدر کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ہم آپ کو بتانا چاہتے ہیں کہ ہم آپ کے آباؤ اجداد کی میراث کا جواب گولیوں سے دیں گے، لیبیا میں کسی بھی ترک فورس سے کوئی رحم نہیں کیا جائے گا کیونکہ وہ رحم کے لائق نہیں ہیں۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ لیبیا کے لوگ ترکوں کی جانب سے کسی قبضے کو قبول نہیں کریں گے اور لیبیا کو ترک فوج کی  کالونی نہیں بننے دیں گے۔

News Code 1902034

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 4 =