بیلجیئم میں کورونا وائرس کی دوسری لہرسے بچنے کے لئے مزيد پابندیاں عائد

بیلجئیم کی حکومت نے کورونا وائرس کی دوسری لہر سے بچنے کیلئے نئی پابندیاں عائد کردی ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے غیر ملکی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بیلجئیم کی حکومت نے کورونا وائرس کی دوسری لہر سے بچنے کیلئے نئی پابندیاں عائد کردی ہیں۔  ان نئی پابندیوں کے تحت 29 جولائی بدھ کے روز سے کوئی بھی شخص ایک ہی گھر کے 5 مستقل افراد سے زیادہ لوگوں سے ملاقات نہیں کرے گا۔

اس بات کا فیصلہ آج بیلجیئم کی سیاسی قیادت پر مشتمل سکیورٹی کونسل کی میٹنگ کے بعد وزیراعظم صوفی ولئیمز نے ایک پریس کانفرنس میں کیا۔ 

انہوں نے کہا کہ ہمارے ملک میں کوروانا وائرس کے مریضوں میں اچانک پھر تیزی سے اضافہ ہونا شروع ہو گیا ہے۔ ابھی اسپتالوں میں داخلے اور اس وائرس سے اموات قابو میں ہیں۔ لیکن ہم نہیں چاہتے کہ ملک میں دوبارہ مکمل لاک ڈاؤن کرنا پڑے۔ اس لئے اب شہری ایک دوسرے سے ملنے میں احتیاط کریں اور ایک ہی گھر کے 5 افراد سے زائد لوگوں سے ملاقات نہ کریں۔

وزیراعظم  نے مزید کہا کہ یہ پابندی آئندہ 4 ہفتوں کیلئے نافذ العمل رہے گی۔ 12 سال سے کم عمر کے بچے اس سے مستثنی ی ہونگے۔

واضح  رہے کہ بیلجیئم میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ میں اچانک اضافہ ہوگیا ہے۔ اور دو ہفتے قبل کے 80 افراد روزانہ کے مقابلے میں اب کورونا پازیٹو کیسسز 200 سے زائد ہورہے ہیں۔

News Code 1901894

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha