شام کی فضائی حدود میں امریکہ کے دو جنگی طیاروں کی ایرانی مسافر بردار طیارہ کو روکنے کی کوشش

شام کی فضائی حدود میں امریکہ کے دو جنگی طیاروں کی جانب سے بیروت جانے والے ایرانی مسافربردار طیارے کا راستہ روکے جانے کا واقعہ پیش آیا ہے ایران نے اس واقعہ کو اشتعال انگيز قراردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق شام کی فضائی حدود میں امریکہ کے دو جنگی طیاروں کی جانب سے بیروت جانے والے ایرانی مسافربردار طیارے کا راستہ روکے جانے کا واقعہ پیش آیا ہے ایران نے اس واقعہ کو اشتعال انگيز قراردیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق  امریکی جنگی طیارے ایرانی مسافر بردار طیارے کے بالکل قریب پہنچ گئے جس کے بعد ایرانی پائلٹ نے ٹکراؤ سے بچنے کے لیے پرواز کی اونچائی تیزی سے کم کی، پرواز کی اونچائی میں تیزی سے کمی کی وجہ سے متعدد مسافر زخمی بھی ہوئے۔ اطلاعات کے مطابق تہران سے بیروت جانے والے ایرانی طیارے نے اس واقعہ کے بعد شیڈول کے مطابق  بیروت کی سمت پرواز جاری رکھی۔

اس سے قبل یہ اطلاع تھی کہ اسرائیلی جنگی طیاروں نے ایرانی مسافر بردار طیارے کا راستہ روکنے کی کوشش کی ہے۔

ادھر ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ اس واقعہ کے بارے میں تحقیقات کا آغاز کردیا گیا ہے انھوں نے مسافروں کی جان کو خطرے میں ڈالنے کے امریکہ کے اس اقدام کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ کا یہ اقدام اشتعال انگیز اور خطے میں بد امنی پھیلانے کی تلاش و کوشش کا حصہ ہے۔ ایرانی سول ایوی ایشن کے ایک اعلی اہلکار کا کہنا ہے کہ ایرانی مسافر بردار طیارہ خيریت کے ساتھ بیروت کے ايئر پورٹ پر پہنچ گیا اور اپنی ماموریت انجما دینے کے بعد کچھ دیر قبل واپس تہران پہنچ گيا ہے۔

News Code 1901792

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 11 =