ایرانی وزیر خارجہ کی بغداد میں عراق کے صدر سے ملاقات

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف ایک اعلی وفد کے ہمراہ عراق کے دورے پر ہیں جہاں انھوں نے عراق کے صدر برہم صالح کے ساتھ ملاقات اور گفتگو کی۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف ایک اعلی وفد کے ہمراہ عراق کے دورے پر ہیں جہاں انھوں نے عراق کے صدر برہم صالح کے ساتھ ملاقات اور گفتگو کی۔ اس ملاقات میں دو طرفہ تعلقات ، علاقائی امور اور عالمی مسائل کے بارے میں تبادلہ خیال کیا گیا۔ ایرانی وزیر خآرجہ نے عراقی حکام کے ساتھ ملاقاتوں میں میجر جنرل شہید سلیمانی کے امریکہ کے ہاتھ بہیمانہ قتل کے بارے میں تحقیقات اور امریکی صدر کے خلاف قانونی اقدامات کے بارے میں بھی تبادلہ خیال کیا۔

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے اس سے قبل عراق کے وزیر اعظم مصطفی الکاظمی کے ساتھ بھی ملاقات اور گفتگو کی۔ اس ملاقات میں دو طرفہ تعلقات ، علاقائی امور اور عالمی مسائل کے بارے میں تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس سے قبل ایرانی وزیر خارجہ نے عراقی وزیر خارجہ کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ نے شہید سلیمانی کو بہیمانہ طور پر قتل کرکے دہشت گردوں کو مدد فراہم کی۔ امریکہ نے میجر جنرل قاسم سلیمانی کو شہید کرکے دہشتت گردوں کو بھر پور مدد فراہم کی اور دہشت گردی کے خلاف محاذ کو کافی نقصان پہنچایا ہے۔ ایرانی وزیر خارجہ نے بغداد ايئر پورٹ پر پہنچنے کے بعد شہید قاسم سلیمانی اور شہید ابو مہدی مہندس کی شہادت کے مقام پر حاضر ہوکر انھیں خراج عقیدت پیش کیا۔

News Code 1901704

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 6 =