قندھار اور غزنی میں طالبان کے حملے میں 6 اہلکار ہلاک

قندھار کے گورنر کی رہائشی عمارت اور غزنی میں طالبان کے حملوں میں 6 اہلکار ہلاک ہوگئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے افغان ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ قندھار کے گورنر کی رہائشی عمارت اور غزنی میں طالبان کے حملوں میں 6 اہلکار ہلاک ہوگئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق افغانستان میں پولیس ہیڈ کوارٹر اور قندھار کے گورنر کی رہائشی عمارت پر طالبان کے خود کُش بم دھماکے نیز غزنی میں طالبان کے حملے میں مجموعی طور پر 6افغان سکیورٹی اہل کار ہلاک ہوگئے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق قندھار کے گورنر قندھار کے ترجمان باہر احمد احمدی نے بتایا کہ بدھ کو علی لاصباح 4 بجے طالبان حملہ آور نے دھماکہ خیز مواد سے بھرا ایک فوجی ٹرک گورنر ہاؤس اور افغان پولیس کے ہیڈکوارٹر تک لے جانے کی کوشش کی اور سکیورٹی اہل کاروں کی جانب سے فائرنگ کرکے روکنے کی کوشش کے بعد خود کو دھماکے سے اُڑا لیا۔

قندھار کے ضلع شاولی میں پیش آنے والے اس واقعے میں تین افغان سکیورٹی اہل کار ہلاک اور 14 شہریوں کے زخمی ہونے کی تصدیق ہوچکی ہے جب کہ پولیس ہیڈ کوارٹر اور گورنر کی رہائشی عمارت کو بھی شدید نقصان پہنچا ہے۔

ادھر افغانستان کے صوبے غزنی میں چوکیوں کا جائزہ لینے کے لیے نکلنے والے ضلعی پولیس کے سربراہ وحید اللہ ایک حملے میں اپنے دو محافظوں سمیت ہلاک ہوگئے۔ طالبان نے باضابطہ طور پر ان دونوں حملوں کی ذمہ داری قبول کرلی ہیں۔

News Code 1901463

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 0 =