مصر میں حاضر سروس یا ریٹائرڈ اہلکاروں کو انتخابات کے لئے اجازت لینا ہوگی

مصر میں حاضر سروس یا ریٹائرڈ اہلکاروں کو الیکشن میں حصہ لینے کے لیے فوج سے پیشگی اجازت لینا ہوگی۔

مہر خبررساں ایجنسی نے مصری الیوم کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ مصر میں حاضر سروس یا ریٹائرڈ اہلکاروں کو الیکشن میں حصہ لینے کے لیے فوج سے پیشگی اجازت لینا ہوگی۔

اطلاعات کے مطابق مصر کی پارلیمنٹ میں نئی ترامیم کی منظوری دی ہے جس میں سے ایک ترمیم کے تحت اب حاضر سروس یا ریٹائرڈ فوجی اہلکاروں کو الیکشن میں حصہ لینے سے قبل اپنے محکمے سے اجازت نامہ حاصل کرنا ہوگا اور صرف اجازت نامے کے حامل اہلکاروں کو ہی الیکشن میں حصہ لینے کی اجازت ہوگی۔

اس سے قبل ایک اور آئینی ترمیم کے ذریعے یہ سابق آرمی چیف اور موجودہ صدر عبد الفتاح السیسی کے 2030 تک اقتدار میں رہنے کی راہ ہموار ہو چکی ہے اور نئی ترمیم کے بعد اب ان کے مدمقابل حصہ لینے والے فوجی اہلکاروں کی راہ میں رکاوٹ پیدا ہوگئی ہے۔

واضح رہے کہ صدر السیسی نے 2013 میں منتخب صدر محمد مرسی کا تختہ الٹنے کے بعد ملک کی باگ دوڑ سنبھال لی تھی اور 2014 میں باقاعدہ صدر منتخب ہوئے تھے اور مارچ 2018 میں دوسری مرتبہ بھی 97 فیصد سے زائد ووٹ لے کر صدر منتخب ہوگئے تھے صدر السیسی کو سعودی عرب کی بھر پور حمایت حاصل ہے جبکہ محمد مرسی کو اقتدار سے ہٹانے اور اسے قتل کرانے کے پیچھے بھی سعودی عرب کا ہاتھ نمایاں ہے۔

News Code 1901444

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 7 =