مقبوضہ کشمیر میں ہندوؤں کو زمین فروخت کرنا شرعاً حرام ہے

پاکستان میں علماء کونسل اور دارالافتاء پاکستان نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں ہندوؤں کو زمین فروخت کرنا شرعاً حرام ہے، او آئی سی اور اقوام متحدہ کو بھارت کی سازشوں کا نوٹس لینا چاہیے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان میں علماء کونسل اور دارالافتاء پاکستان نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں ہندوؤں کو زمین فروخت کرنا شرعاً حرام ہے، او آئی سی اور اقوام متحدہ کو بھارت کی سازشوں کا نوٹس لینا چاہیے۔

ایک فتویٰ میں  علماء کونسل کا کہنا ہے کہ بھارت اپنے آئین میں تبدیلی کر کے کشمیر کو اپنا حصہ بنانے اور وہاں بھارتی ہندوؤں کو آباد کرنے کی سازش کر رہا ہے، ان حالات میں کشمیر کے مسلمانوں کیلئے شرعی طور پر جائز نہیں ہے کہ وہ اپنی زمینیں کسی ہندو کو فروخت کریں۔

علماء نے مزید کہا کہ بھارتی حکومت ریاست کشمیر کی حیثیت ختم کرنے پر اتر آئی ہے جو وہاں مسلمانوں کا پیدائشی حق ہے، پاکستان علماء کونسل آئندہ ہفتہ اسلام آباد میں کشمیر و فلسطین کے بارے میں کانفرنس منعقد کرے گی۔

News Code 1901414

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 6 =