افغانستان میں بارودی سرنگ کے دھماکے میں ایک خاتون اپنے ڈرائیور سمیت ہلاک

افغانستان انڈیپینڈنٹ ہیومن رائٹس کمیشن کی گاڑی باردوی سرنگ دھماکے میں تباہ ہوگئی جس کے نتیجے میں این جی او سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون اپنے ڈرائیور سمیت ہلاک ہوگئیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے افغان ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغانستان انڈیپینڈنٹ ہیومن رائٹس کمیشن کی گاڑی باردوی سرنگ دھماکے میں تباہ ہوگئی جس کے نتیجے میں این جی او سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون اپنے ڈرائیور سمیت  ہلاک ہوگئیں۔

اطلاعات کے مطابق بارودی سرنگ دھماکہ دارالحکومت کابل کی مصروف شاہراہ پر اس وقت ہوا جب انسانی حقوق کی ایک این جی او کی گاڑی وہاں سے گزر رہی تھی۔ دھماکہ اتنا خوفناک تھا کہ گاڑی مکمل طور پر تباہ ہوگئی۔

کابل پولیس کے ترجمان  کے مطابق مقناطیسی باردوی سرنگ دھماکے میں افغانستان انڈیپینڈنٹ ہیومن رائٹس کمیشن  کی خاتون وکیل 24 سالہ فاطمہ خلیل اور ان کا ڈرائیور جاوید فولاد  ہلاک ہوگئے۔ واضح رہے کہ  ایک ماہ کے دوران کابل میں 12 بارودی سرنگ دھماکوں میں 12 شہری ہلاک اور 40 سے زائد زخمی ہوئے ہیں۔

News Code 1901207

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 8 =