جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے خلاف صدارتی ریفرنس کالعدم

پاکستانی سپریم کورٹ نے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے خلاف صدارتی ریفرنس کو کالعدم قرار دے دیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے سپریم کورٹ  نے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے خلاف صدارتی ریفرنس کو کالعدم قرار دے دیا ہے۔  اطلاعات کے مطابق دس ججز پر مشتمل بینچ نے مختصر فیصلہ سنایا۔ سپریم کورٹ نے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی ریفرنس کالعدم قرار دینے کی درخواست منظور کرلی۔

جسٹس قاضی فائز عیسی کے خلاف ریفرنس کالعدم قرار دینے کا تحریری فیصلہ جاری کردیا گیا، سپریم جوڈیشل کونسل میں جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے خلاف کارروائی ختم کردی گئی۔  سپریم کورٹ نے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کےخلاف صدارتی ریفرنس کالعدم قرار دےدیا۔ تین کے مقابلے میں 7جج صاحبان نے ٹیکس معاملہ ایف بی آر کو بھیجنے کا حکم دیا ہے۔ پاکستانی سپریم کورٹ کا دس رکنی فل بینچ جسٹس عمر عطا بندیال، جسٹس مقبول باقر، جسٹس منظور احمد ملک، جسٹس فیصل عرب، جسٹس مظہر عالم خان میاں خیل، جسٹس سجاد علی شاہ، جسٹس سید منصورعلی شاہ، جسٹس منیب اختر، جسٹس یحییٰ آفریدی اور جسٹس قاضی محمد امین احمد پر مشتمل ہے۔

News Code 1901021

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 1 =