کراچی میں انسداد دہشت گردی اہلکار نے ڈاکٹر کو فائرنگ کرکے زخمی کردیا

کراچی میں محکمہ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) اہلکار نے شہر کے بڑے اور اہم اسپتال میں گھس کر ڈاکٹر پر قاتلانہ حملہ کردیا جس سے وہ زخمی ہوگیا، جبکہ ملزم اہلکار کو گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ کراچی میں محکمہ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) اہلکار نے شہر کے بڑے اور اہم اسپتال میں گھس کر ڈاکٹر پر قاتلانہ حملہ کردیا جس سے وہ زخمی ہوگیا، جبکہ ملزم اہلکار کو گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔ کراچی میں سی ٹی ڈی اہلکار کی ادارہ امراض قلب، این آئی سی وی ڈی میں گھس کر ڈاکٹروں سے غنڈہ گردی کا مظاہرہ کیا اور گولیاں مار کر ایک ڈاکٹر کو زخمی کردیا۔

ڈاکٹر فہد کے ساتھیوں کے مطابق ملزم نے سیدھی گولی بھی چلائی تھی لیکن خوش قسمتی سے ڈاکٹر فہد کو نہ لگی، زخمی حالت میں ڈاکٹر فہد جان بچانے کے لیے بھاگے تو ملزم ان کا پیچھا کرتا گیا۔

پولیس پہنچنے پر ملزم موقع سے فرار تو ہوا مگر ڈاکٹر فہد کا تعاقب کر کے پھر جناح اسپتال بھی پہنچا جہاں انہیں طبی امداد کے لیے لے جایا گیا تھا۔

ملزم کامران کو گرفتار کرکے اقدام قتل کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

ڈاکٹروں اور پولیس حکام نے بتایا ہے کہ ملزم اہلکار ایک دن قبل بھی آیا تھا اور ڈاکٹر سے نیند کی گولیاں مانگی تھیں اور ڈاکٹر کی جانب سے گولیاں نہ دینے پر شور شرابا کرتا ہوا چلا گیا تھا۔

آج ملزم اہلکاراسپتال گیا تو کل والا ڈاکٹر اسے نہ ملا جس پر اس نے فائرنگ کرکے ڈاکٹر فہد کو زخمی کردیا۔

News Code 1900999

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 11 =