محمد بن سلمان اور محمد بن زاید کی صدی معاملے کو عملی جامہ پہنانے کی تلاش و کوشش جاری

اسرائیلی اخبار ہاآرٹض نے فاش کیا ہے کہ متحدہ عرب امارات کے حاکم محمد بن زاید اور سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان دونوں اسرائیل کے ساتھ دوستی کا ہاتھ بڑھاتے ہوئے صدی معاملے کو عملی جامہ پہنانے کی تلاش و کوشش جاری رکھے ہوئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے القدس العربی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ اسرائیلی اخبار ہاآرٹض نے فاش کیا ہے کہ متحدہ عرب امارات کے حاکم محمد بن زاید اور سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان دونوں اسرائیل کے ساتھ دوستی کا ہاتھ بڑھاتے ہوئے صدی معاملے کو عملی جامہ پہنانے کی تلاش و کوشش جاری رکھے ہوئے ہیں۔

ہاآرٹض کے مطابق امریکہ میں متحدہ عرب امارات کے سفیرالعتیبہ نے اپنے ایک مقالہ میں اسرائیل کو عربوں کا حامی اور دوست ملک قراردیا ہے جس سے ثابت ہوتا ہے کہ امارات اسرائیل کے ساتھ دوستی برقرار کرنے کے لئے کس قدر بے چین ہے۔ العتیبہ کا کہنا ہے کہ اسرائيل عربوں کا حامی اور دوست ہے اور عرب ممالک اسرائیل کے ساتھ ملکرخطے میں ایران کے بڑھتے ہوئے اثر و رسوخ کو روک سکتے ہیں ۔ متحدہ عرب امارات کے سفیر کا کہنا ہے کہ صرف امارات کے بادشاہ محمد بن زاید ہی اسرائیل کے ساتھ دوستی کے خواہاں نہیں بلکہ سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان بھی اسرائیل کے حامی اور دوست  ہیں اور دونوں حکمراں صدی معاملے کو عملی جامہ پہنانے کے سلسلے میں اپنی تلاش و کوشش جاری رکھے ہوئے ہیں۔

News Code 1900909

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 0 =