تمام سکھ آج بھی خالصتان کے حامی اور طرفدار ہیں

بھارت میں اکال تخت کے جتھہ دار گیانی ہرپریت سنگھ نے کہا ہے کہ تمام سکھ آج بھی خالصتان کے حامی اور طرفدار ہیں، تمام سکھ خالصتان چاہتے ہیں اور اگر بھارتی حکومت انہیں خالصتان دے دیتی ہے تو وہ اسے لے لیں گے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارت میں اکال تخت کے جتھہ دار گیانی ہرپریت سنگھ نے کہا ہے کہ  تمام سکھ آج بھی خالصتان کے حامی اور طرفدار ہیں،  تمام سکھ خالصتان چاہتے ہیں اور اگر بھارتی حکومت انہیں خالصتان دے دیتی ہے تو وہ اسے لے لیں گے۔ اطلاعات کے مطابق گزشتہ روز ہرپریت سنگھ کی پریس کانفرنس میں صحافیوں نے ان سے سوال کیا کہ آپریشن بلیو اسٹار کے 36 سال مکمل ہونے پر منعقدہ جلسے میں آزاد خالصتان کے نعروں سے متعلق وہ کیا کہیں گے، تو اس پر ہرپریت سنگھ نے کہا " ’جلسے کے بعد ایسے نعرے لگنا کوئی غلط بات نہیں۔ اگر حکومت ہمیں خالصتان دیتی ہے تو ہم اس سے زیادہ اور کیا مانگ سکتے ہیں؟ ہم اسے قبول کرلیں گے، ہر سکھ خالصتان چاہتا ہے" ۔

واضح رہے کہ 1984 میں امرتسر میں سکھوں کے مقدس مقام گولڈن ٹیمپل پر بھارتی فوج نے حملہ کیا تھا اور  " آپریشن بلیو اسٹار"  میں  سیکڑوں سکھوں کو ہلاک کردیا تھا جو خالصتان کا مطالبہ کررہے تھے۔

News Code 1900740

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 7 =