نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم کو کیفے میں داخل ہونے سے روک دیا گیا

نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن اور ان کے ساتھی کو کیفے میں سماجی دوری کے قواعد کے تحت مزید گنجائش نہ ہونے پر داخل ہونے سے روک دیا گیا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے غیر ملکی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن اور ان کے ساتھی کو کیفے میں سماجی دوری کے قواعد کے تحت مزید گنجائش نہ ہونے پر داخل ہونے سے روک دیا گیا۔

اطلاعات  کے مطابق وزیراعظم جیسنڈا اپنے ساتھی کلارک گیفورڈ کے ہمراہ ویلنگٹن کے معروف کیفے پہنچیں تو سماجی دوری کے قواعد کے مطابق وہاں مزید لوگوں کی گنجائش نہیں تھی، ملازم نے وزیراعظم کو بتایا کہ اس وقت کیفے میں مزید مہمانوں کی کوئی گنجائش موجود نہیں ہے۔

جیسنڈا وہاں سے لوٹنے کے لیے روانہ ہونے ہی لگیں تو کیفے میں موجود لوگوں کی بڑی تعداد نے اپنی جگہ فارغ کردی۔

جوڑے کے واپس آنے کے بعد ایک ویٹر بھاگتے ہوئے ان کے پیچھے آیا اور اطلاع دی کہ جگہ خالی ہوچکی ہے اور وہ وہاں  آ سکتی ہیں۔

گزشتہ روز پیش آنے والے اس واقعے کا الزام جیسنڈا کے ساتھی  کلارک گیفورڈ نے اپنے سر لیتے ہوئے کہا کہ " یہ میری غلطی ہے کہ میں پہلے سے کہیں جگہ بُک نہ کروا سکا۔"

کلارک نے یہ بھی کہا کہ انہیں بہت اچھا لگا کہ ویٹر نے اطلاع دی کہ جگہ خالی ہے، اس کیفے کی سروس بہت اچھی تھی۔

واضح رہے کہ جیسنڈا آرڈرن کی حکومت نے جمعرات کو سماجی دوری کے کچھ اصولوں میں نرمی کا اعلان کیا تھا، جس کے تحت کیفیز، سینیما گھروں اور شاپنگ مالز کو دو مہینے بعد کھول دیا گیا تھا ۔ نیوزی لینڈ میں کرونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لیے عائد کی جانے والی پابندیاں دنیا میں سخت ترین تھیں۔

وزیر اعظم کی پریس سروس کے مطابق کیفے میں جگہ کے لیے انتظار کرنا سماجی دوری کے اصولوں کے مطابق ہے۔

سرکاری ٹی وی پر جاری بیان میں بتایا گیا کہ ہے کہ وزیر اعظم کا کہنا ہے کہ وہ بھی باقی شہریوں کی طرح انتظار کر سکتی ہیں۔

News Code 1900270

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 6 =